Thursday , November 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / فرنچ اوپن کے اہم دعویداروںکو نوجوان کھلاڑیوں سے خطرہ

فرنچ اوپن کے اہم دعویداروںکو نوجوان کھلاڑیوں سے خطرہ

آج دوسرے گرانڈ سلام کا آغاز

پیرس27 مئی (سیاست ڈاٹ کام )سیزن کے دوسرے گرانڈ سلام فرنچ اوپن کا کل یہاں آغاز ہورہا ہے اور اس مرتبہ یہاں سربیائی ٹیسن اسٹار نواک جوکووچ اپنے خطاب کا دفاع کریں گے جبکہ 9 مرتبہ کے چیمپین رافل نڈال شاندار فام میں ہیں اور انہیں 10 فرنچ اوپن خطاب کے لئے عالمی نمبر ایک اینڈی مرے کے ساتھ خطاب کے مضبوط دعویدار مانا جارہا ہے لیکن چند ایسے نوجوان کھلاڑی بھی صف میں شامل ہیں جو مذکورہ کھلاڑیوں کو حیران کن طور پر ٹورنمنٹ میں شکست دیتے ہوئے ایک نئے دور کا آغاز بھی کرسکتے ہیں۔دریں اثناء 20 سالہ کھلاڑی الیگزینڈر زوریف جنھوں نے گزشتہ ہفتے اٹالین اوپن کے فائنل میں جوکووچ کو شکست دی ہے وہ اور 23 سالہ ڈومینک تھم اِس فہرست میں سب سے اوپر ہیں۔ دریں اثناء تھم جنھوں نے نڈال کے خلاف متواتر 3 فائنلس کھیلتے ہوئے آخری فائنل میں فرنچ اوپن کے دعویدار نڈال کو شکست دی ہے وہ مانتے ہیں کہ نڈال بھلے ہی فرنچ اوپن کے لئے سب سے پسندیدہ کھلاڑی ہیں اور دعویداروں کی فہرست میں پہلے مقام پر فائز ہیں جن کے بعد دفاعی چمپئن جوکووچ اور عالمی نمبر ایک مرے بھی موجود ہے لیکن میرے ہمراہ الیگزینڈر ٹورنمنٹ میں حیران کن نتیجہ فراہم کرسکتے ہیں۔ اے ٹی پی کی 40 سالہ تاریخ میں یہ پہلی مرتبہ ہے کہ سرفہرست پانچ کھلاڑی 30 سال کی عمر سے تجاوز کرچکے ہیں۔ جس کے باوجود نڈال، جوکووچ اور مرے خطاب کے لئے ہنوز دعویداروں میں شامل ہیں۔ تھم اور زورف کے علاوہ مایلوس رائنک، کائن شکوری بھی گزشتہ ایک عرصہ سے سرفہرست 10 کھلاڑیوں میں شامل ہیں۔ شائقین کے لئے فرنچ اوپن اِس لئے مایوس کن ہوسکتا ہے کہ اِس میں 18 مرتبہ کیگرانڈ سلام چمپئن راجر فیڈرر کے علاوہ خاتون زمرے میں سرینا ولیمس اور شارا پوا ایکشن میں نظر نہیں آئیں گی۔ زخموں کی وجہ سے وکٹوریا آئزرنکا اور پیٹرا کوویٹووا بھی موجود نہیں ہیں۔

TOPPOPULARRECENT