Saturday , August 18 2018
Home / ہندوستان / فساد زدہ مظفرپور میں صورتحال پرامن

فساد زدہ مظفرپور میں صورتحال پرامن

گھر بار چھوڑ جانے والوں کی بتدریج واپسی، سخت سکیورٹی برقرار، اعلیٰ پولیس عہدیدار کا بیان

گھر بار چھوڑ جانے والوں کی بتدریج واپسی، سخت سکیورٹی برقرار، اعلیٰ پولیس عہدیدار کا بیان
مظفرپور ؍ پٹنہ 20 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) زائداز 24 خاندان جو آتشزنی سے متاثرہ عزیز پور گاؤں چھوڑ گئے تھے، اپنے گھروں کو واپس لوٹ آئے ہیں جبکہ 3 پولیس ملازمین کو اِس تشدد کے سلسلہ میں پولیس لائنس کو بھیج دیا گیا ہے، جس کے نتیجہ میں 5 افراد بشمول ایک اغواء کردہ نوجوان کی موت ہوئی۔ ایڈیشنل ڈائرکٹر جنرل آف پولیس (ہیڈکوارٹرس) گپتیشور پانڈے نے آج نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ سرائیا پولیس اسٹیشن کے اسٹیشن ہاؤس آفیسر (ایس ایچ او) آشوتوش کمار، ایک انسپکٹر اور اِس کیس کے تحقیقاتی عہدیدار کو آتشزنی کے معاملہ کی چھان بین کے لئے پولیس لائنس بھیجا گیا ہے۔ پانڈے صورتحال کی نگرانی کے لئے ضلع مظفر پور کے موضع عزیز پور میں کیمپ کئے ہوئے ہیں اور وہاں سکیورٹی کو یقینی بنایا جارہا ہے۔ اے ڈی جی نے کہاکہ اِس گاؤں کے کئی مکین جو خوف و دہشت کی وجہ سے بھاگ گئے تھے، اپنے مکانوں کو واپس ہورہے ہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ ایک ایف آئی آر آتشزنی کے سلسلہ میں 2 ہزار نامعلوم افراد کے خلاف سرائیا پولیس اسٹیشن میں درج رجسٹر کی گئی ہے۔ اِس موضع سے آتشزنی کے بعد جس میں حملہ آوروں نے اتوار کی شام کئی مکانات کو جلا دیا، 4 جھلسی ہوئی نعشیں برآمد ہوئی ہیں۔ 10 روز قبل ایک نوجوان بھرتیندو کے اغواء اور پھر اُس کی نعش برآمد ہونے پر تشدد چھڑ گیا۔ ایس ایس پی نے کہاکہ اِس تشدد کے سلسلہ میں جس میں ہجوم نے بھرتیندو کی نعش کی برآمدگی پر 9 مکانات نذر آتش کردیئے، کم از کم 14 افراد حراست میں لئے گئے ہیں۔ اے ڈی جی نے کہاکہ بہار ملٹری پولیس کی 5 کمپنیاں (500 پرسونل) کی اضافی تعیناتی کے ساتھ سخت سکیورٹی بدستور قائم ہے۔ بہار کے سینئر وزیر رمائی رام نے اِس گاؤں کا دورہ کیا اور متاثرین میں غذائی اشیاء تقسیم کئے۔ سینئر بی جے پی لیڈر اور سابق ڈپٹی چیف منسٹر سشیل کمار مودی بھی آج موضع عزیز پور کا دورہ کررہے ہیں تاکہ صورتحال سے واقفیت حاصل کی جائے۔

TOPPOPULARRECENT