Thursday , September 20 2018
Home / دنیا / فلسطینی علاقوں کے انضمام پر اسرائیل سے بات چیت کی تردید

فلسطینی علاقوں کے انضمام پر اسرائیل سے بات چیت کی تردید

وائٹ ہاؤز نے کھلے عام صیہونی دعویٰ مسترد کردیا، نیتن یاہو کو سُبکی
واشنگٹن 13 فروری (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے اسرائیل سے اختلافات اور عدم اتحاد کا شاذ و نادر ہی کیا جانے والا کھلے عام مظاہرہ کرتے ہوئے اسرائیل کے ان دعوؤں کو آج دو ٹوک انداز میں مسترد کردیا کہ ان اراضیات کے حصول و انضمام کے لئے بات چیت جاری ہے جن (اراضیات) پر فلسطینیوں کی جانب سے اپنی ملکیت کا دعویٰ کیا جاتا رہا ہے۔ اسرائیل کے وزیراعظم بنجامن نیتن یاہو نے کہا تھا کہ اسرائیلی مقبوضہ مغربی کنارہ میں بستیوں کے حصول و انضمام کے بارے میں واشنگٹن سے بات چیت جاری ہے۔ یہ ایسا اقدام ہے جس سے پہلے ہی سے مخدوش امن مساعی بُری طرح متاثر ہوسکتی ہے۔ تاہم امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے داماد اور مشیر جارڈ کشنر سے قریبی ربط ضبط کے ساتھ کام کرنے والے وہائٹ ہاؤز کے ترجمان جوش رافل نے بنجامن نیتن یاہو کی طرف سے دی گئی اطلاعات کی تردید کی ہے۔ وہائٹ ہاؤز کے ترجمان رافل نے کہاکہ ’’مغربی کنارہ کے (اسرائیل میں) انضمام کے منصوبہ پر اسرائیل کے ساتھ (امریکہ کی) بات چیت کی یہ اطلاعات غلط ہیں‘‘۔ جوش رافل نے مزید کہاکہ ’’امریکہ اور اسرائیل نے ایسی کسی تجویز پر کبھی کوئی تبادلہ خیال نہیں کیا اور صدر (ڈونالڈ ٹرمپ) کی تمام تر توجہ ان کی فلسطین ۔ اسرائیل امن مساعی پر مرکوز ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT