Thursday , January 17 2019

فلسطین اور القدس کا تحفظ ، مسلم امہ کی ذمہ داری : ترکی

استنبول ۔ /16 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ترکی کے صدر رجب طیب اردغان نے کہا کہ فلسطین اور القدس ترکی کا قومی مسئلہ ہے ، القدس پر اپنا تسلط مضبوط بنانے کے لئے اسرائیل ثقافتی یلغار کا مرتکب ہے اور وہ مقدس شہر سے اسلامی آثار کو مٹانے کی سازش کررہا ہے ۔ استنبول میں منعقدہ پارلیمان برائے القدس کانفرنس سے خطاب میں ترک صدر نے کہا کہ فلسطینی قوم کی آزادی کے لئے پوری مسلم امہ کو سیسہ پلائی دیوار بننا ہوگا ۔ ترک صدر نے عالم اسلام اور عالمی برادری پر زور دیا کہ انہیں فلسطین کے حوالے سے اپنی ذمہ داریوں کی انجام دہی کے لئے رابطوں کو مزید فروغ دینا ہوگا ۔ فلسطینی قوم 70 سال سے ایک غاصب قوم کے ظلم کی چکی میں پس رہے ہیں ۔ اب وقت آگیا کہ فلسطینیوں کو ان کے حقوق سے محروم رکھنے کا سلسلہ بند کیا جائے ۔ ترک صدر نے کہا کہ قضیہ فلسطین اور القدس کا مسئلہ صرف فلسطینیوں کا نہیں بلکہ پور ی مسلم امہ اور ایک ارب 70 کروڑ مسلمانوں کا اجتماعی مسئلہ ہے ۔ القدس کا دفاع انسانیت کا دفاع ، امن انصاف اور آزادی کا دفاع ہے ۔ اسی دوران ترک صدر رجب طیب اردگان نے امریکی ہم منصب ڈونالڈ ٹرمپ سے فون پر گفتگو کی ۔ شامی بحران پر غور کیا گیا ۔ ترک ایوان صدر سے جاری بیان کے مطابق رجب اردغان اور ڈونالڈ ٹرمپ کے مابین گزشتہ ٹیلی فون پر گفتگو ہوئی ۔ دوران دو طرفہ معاملات سمیت سکیورٹی اور انسداد دہشت گردی سمیت شام کی تازہ صورتحال کا جائزہ لیا گیا ۔ اردغان نے اپنے امریکی ہم منصب کو ترکی کے علحدگی پسند دہشت گرد تنظیم پی کے کے ، وائی پی ڈی سے درپیش سلامتی مسائل سے آگہی کرائی ۔ دونوں سربراہان نے شام کے حوالے سے کہیں زیادہ موثر رابطے کے قیام کے معاملے میں اتفاق رائے کا اظہار کیا ۔ واضح رہے صدر ترکی نے دریائے فرات کے مشرقی کنارے پر فوجی آپریشن کا اشارہ دیا تھا ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT