Sunday , June 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / فلسطین پر اسرائیلی حملہ کی شدید مذمت

فلسطین پر اسرائیلی حملہ کی شدید مذمت

کرنول 9؍آگست(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)انسانیت کی حفاظت کرو۔ فلسطینیوںکوسہارادو۔کے عنوان پر جمعیۃ علماء ہندشاخ کرنول کے زیراہتمام عباس نگرمیںواقع جمعیۃ کے دفترمیںشہرکے دانشوروںپرمشتمل ایک اہم مشاورتی اجلاس منعقد کیاگیا۔صدرجمعیۃ مولاناوقاضی عبدالماجدنے اس اجلاس کی صدارت کی۔اس موقعہ پرمولاناعبدالماجدنے حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے

کرنول 9؍آگست(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)انسانیت کی حفاظت کرو۔ فلسطینیوںکوسہارادو۔کے عنوان پر جمعیۃ علماء ہندشاخ کرنول کے زیراہتمام عباس نگرمیںواقع جمعیۃ کے دفترمیںشہرکے دانشوروںپرمشتمل ایک اہم مشاورتی اجلاس منعقد کیاگیا۔صدرجمعیۃ مولاناوقاضی عبدالماجدنے اس اجلاس کی صدارت کی۔اس موقعہ پرمولاناعبدالماجدنے حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ فلسطین پراسرائیل کاحملہ ایک بدبختانہ فعل ہے،انہوں نے کہاکہ اقوام متحدہ کی اجازت کے بغیرکسی بھی ملک کوکسی دوسرے ملک پرحملہ کاحق نہیںہے،انہوں نے کہاکہ اسرائیل ایک دہشت گردملک ہے،دہشت گردوںکومنہ توڑجواب دینااورظلم سے روکنااقوام متحدہ کی ذمہ داری ہے،مگر اقوام متحدہ خاموش تماشابینی میںمصروف ہے،اقوام متحدہ اس سلسلہ میںمکمل طورپرناکام ہے،مولانانے کہاکہ ایسے میںعالم اسلام کی یہ ذمہ داری بنتی ہے کہ ایک پلاٹ فارم پرآئیں،اتحاد سے ظالموںکوظلم سے روکیں،مولانانے کہاکہ فلسطین میںروزانہ سینکڑوںمعصوموںکی جانیںجارہی ہیں،یہاںتک کہ اسکولوںمیںتعلیم حاصل کرنے والے معصوم بچوںاوردواخانوںمیںشریک مریضوںکوتک موت کے گھاٹ اتاراجارہاہے،جوانسانیت سوزواقعات ہیں،تاقیامت ناقابل فراموش ظلم ہے۔جمعیۃ کے ضلعی معتمدمولاناعبداللہ رشادی نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ملک فلسطین فلسطینیوں کاپیدائشی حق ہے،ان کاپیدائشی حق چھینانہیںجاسکتا،انہوں نے کہاکہ فلسطینیوںپرحملہ اقوام متحدہ کے لئے دھبہ ہے،اقوام متحدہ کی ذمہ داری ہوتی ہے کہ وہ اس ظلم سے روکیں۔کنوینررائلسیمااردوایجوکیشنل کمیٹی جناب بی شمس الدین نے کہاکہ بلاتفریق مذہب تمام لوگ متحدہ طورپرموبائل نمبر08030636100پرایک مس کال روانہ کرکے فلسطینیوںکی حفاظت کرنے میںمعاون ومددگارثابت ہوتے ہوئے دہشت گرداسرائیل کے خلاف آوازاٹھائیں۔ان کے علاوہ کئی ارکان جمعیۃ نے اسرائیل کے حملوںکوروکنے کے لئے اپنے اپنے خیالات کااظہارکیا۔اس موقعہ پرمولاناعبدالہادی، حافظ صغیر، حافظ انیس، حافظ بشیر، حافظ عبدالمالک، مولاناعبدالمالک، مولاناابراہیم، مولانارفیع، منوہر،سلطان صاحب،مجاہداحمدصاحب،نثاراحمدصاحب اورچاندباشاہ صاحب کے علاوہ کئی ہمدردان ملت شریک رہے۔

TOPPOPULARRECENT