Friday , November 17 2017
Home / دنیا / فلوریڈا میں لاکھوں افراد کا تخلیہ

فلوریڈا میں لاکھوں افراد کا تخلیہ

طوفان ’ارما‘ کی کیوبا میں تباہی کے بعد تیزی سے پیشرفت
میامی ؍ واشنگٹن9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) سمندری طوفان ’ارما‘ کیریبیئن میں 22 افراد کی ہلاکت اور املاک کی شدید تباہی کے بعد امریکی ریاستی فلوریڈا کی طرف بڑھ رہا ہے اور حکام نے فلوریڈا کے 6.3 ملین افراد کو انخلا کے لئے متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وقت بہت کم ہے۔فلوریڈا کے حکام کے مطابق متوقع طور پر ارما اتوار کو ریاست سے ٹکرائے گا لہذا ریاست کے لگ بھگ ایک تہائی سے زائد علاقوں کے تقریباً 63 لاکھ لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل ہونے کا کہا گیا ہے۔ ریاست کے گورنر رک اسکاٹ نے ارما کو ایک ایسے تباہ کن طوفان سے تعبیر کیا ہے جو اس ریاست نے پہلے کبھی نہیں دیکھا، اور ان کے بقول یہ ریاست سے بھی وسیع طوفان ہے۔ انھوں نے متنبہ کیا کہ “وقت ہمارے ہاتھوں سے نکلا جا رہا ہے، طوفان تقریباً یہاں پہنچنے ہی والا ہے۔ محکمہ موسمیات کے حکام نے طوفان کی سمت کو جمعہ کو دوبارہ تعین کرتے ہوئے بتایا کہ میامی کے تقریباً 63 لاکھ لوگ اس سے براہ راست متاثر ہونے سے بچ جائیں گے۔جمعہ کو دیر گئے ارما درجہ پانچ کی خطرناک حد کی شدت اختیار کر گیا جب کہ اس سے قبل اس میں کچھ کمی واقع ہوئی تھی۔ ماہرین اسے بحر اوقیانوس میں آنے والا شدید ترین طوفان تصور کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ امریکہ تک پہنچتے ہوئے یہ اپنی شدت برقرار رکھ سکتا ہے۔ کیوبا میں عہدیداروں نے بتایا کہ طوفان نے کافی تباہی مچائی تاہم جانی و مالی نقصانات کے بارے میں تفصیلات نہیں بتائی گئیں۔ کریبیا کے سب سے بڑے جزیرے میں ایک ملین سے زائد افراد کا احتیاطی طور پر تخلیہ کرادیا گیا تھا۔ توقع ہے کہ ارما کل فلوریڈا سے ٹکرائے گا۔ قومی موسمیاتی ادارہ نے ٹوئٹ کیا ہے کہ ارما انتہائی خطرناک طوفان ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT