Monday , June 25 2018
Home / Top Stories / فلوریڈا کے اسکول میں سابق طالب علم کی فائرنگ، 17 ہلاک

فلوریڈا کے اسکول میں سابق طالب علم کی فائرنگ، 17 ہلاک

واشنگٹن 15 فروری (سیاست ڈاٹ کام) ایک سابق طالب علم اسالٹ طرز کی رائفل کے ساتھ زبردستی فلوریڈا کے ایک ہائی اسکول میں داخل ہوگیا اور اندھا دھند فائرنگ شروع کردی جس میں 17 افراد ہلاک اور 12 سے زیادہ دیگر زخمی ہوگئے۔ ہندوستانی نژاد امریکی طالب علم سابق مہلک ترین فائرنگ کے واقعات میں ملوث رہ چکا ہے۔ 19 سالہ مشتبہ طالب علم کی بحیثیت نیکولس کروز شناخت کی گئی ہے۔ وہ مارجوری اسٹون مین ڈگلس ہائی اسکول پارک لینڈ کا سابق طالب علم ہے۔ اُسے ڈسپلن سے متعلق وجوہات کی بناء پر اسکول سے خارج کردیا گیا تھا۔ بعدازاں اُسے کل مہلک توڑ پھوڑ کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ اسکول میں ہندوستانی نژاد امریکی طلبہ کی اکثریت ہے اور کم از کم اس برادری کے 17 افراد ہلاک اور دیگر اِس واقعہ میں زخمی ہوگئے۔ ذرائع ابلاغ کی اطلاعات کے بموجب مشتبہ شخص ایک غیر متوازن کمسن شخصیت ہے جس نے اندھا دھند فائرنگ کرنے سے پہلے سماجی ذرائع ابلاغ پر پریشان کن مواد شائع کیا تھا۔ بروورڈ کاؤنٹی کے شیرف اسکاٹ اسرائیل نے فلوریڈا میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہاکہ نیکولس کروز قاتل ہے وہ حراست میں ہے، ہم پہلے ہی ویب سائٹس اور سوشیل میڈیا پر غیر قانونی مواد شائع کرنے کے الزام میں اُس کے خلاف کارروائی کا آغاز کرچکے ہیں۔ اُس نے متعدد رسالوں، کئی میگزینوں میں قابل اعتراض مواد شائع کرنے اور فی الحال اے آر ۔ 15 رائفل رکھنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ 17 مہلوکین میں 12 عمارت کے اندر تھے جبکہ دو کو عمارت کے باہر ایک کو اسکول کے باہر سڑک پر گولی مار دی گئی۔ دو افراد دواخانہ میں فوت ہوگئے۔ تاہم تعداد کی توثیق نہیں ہوسکی کہ مہلوکین میں کتنے طلبہ تھے۔ عہدیداروں کے بموجب کئی مہلوکین کا دواخانہ میں علاج کیا گیا تھا۔ اُن میں سے 3 کی حالت نازک ہے۔ ہندوستانی نژاد طالب علم نویں جماعت کا ہے، اُسے کرچیوں کی زد میں آنے سے معمولی زخم آئے ہیں۔ اُس کا بھی دواخانہ میں علاج ہورہا ہے۔ کاؤنٹی اور برادری کے لئے آج کا دن ایک المناک دن ہے۔ تمام ہندوستانی نژاد امریکی مہلوکین کیلئے دعا کررہے ہیں۔ شیکھر ریڈی جس کے دوست کا بیٹا اندھا دھند فائرنگ میں زخمی ہوا ہے، کہاکہ ایف بی آئی تحقیقات میں مقامی عہدیداروں کی مدد کررہی ہے۔ اسرائیل نے کہاکہ کروز کو ڈسپلن کی وجوہات کی بناء پر اسکول سے خارج کیا گیا تھا۔ شیرف نے کہاکہ وہ تفصیلات سے ناواقف ہیں تاہم میڈیا کی اطلاعات کے بموجب کروز کو گزشتہ سال اپنی سابق محبوبہ اور ایک نئے مرد دوست سے جھگڑا کرنے پر اسکول سے خارج کیا گیا ہے۔ اندھا دھند فائرنگ اعتدال پسند امریکہ کی تاریخ میں اب تک کی مہلک ترین فائرنگ ہے اس سے بندوق پر کنٹرول کے بارے میں مباحث کا احیاء ہوگیا ہے۔ صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ نے مہلوکین کے سوگوار خاندانوں کو تعزیت پیش کی ہے اور دعائیں کی ہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ کوئی بھی بچہ، ٹیچر یا کوئی دیگر خود کو امریکی اسکول میں محفوظ نہیں سمجھے گا۔
صدر ٹرمپ نے فلوریڈا کے گورنر اور دیگر اعلیٰ سطحی عہدیداروں سے بات چیت کی۔ فلوریڈا کے رکن سنیٹ کرس مرسی نے اسے ایک ہولناک منظر قرار دیا جو جنوبی فلوریڈا کے ہائی اسکول میں نظر آرہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT