Sunday , February 18 2018
Home / ہندوستان / فوجی سربراہ کا ’’سرحد پار دہشت گردی کے ذرائع‘‘پر سخت پیغام

فوجی سربراہ کا ’’سرحد پار دہشت گردی کے ذرائع‘‘پر سخت پیغام

نئی دہلی۔ 7نومبر (سیاست ڈاٹ کام) فوجی سربراہ جنرل بپن راوت نے ‘سرحد پار دہشت گردی کے ذرائع’کو سخت پیغام دیتے ہوئے آج کہا کہ دہشت گردوں کے خاتمے کے لئے جموں و کشمیر میں فوج کی مہم جاری رہے گی۔ جموں و کشمیر میں فوج اور پولس کے مشترکہ آپریشن میں کل ہی تین دہشت گرد مارے گئے ہیں، جن میں دہشت گرد سرغنہ اور جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر کا بھانجہ طلحہ رشید بھی شامل ہے ۔ فوج کے سربراہ نے یہاں ایک پروگرام کے دوران علاحدہ طورپر صحافیوں کے ساتھ بات چیت میں پاکستان کا نام لئے بغیر کہا کہ “ہم جانتے ہیں کہ ان دہشت گردوں کو کہاں سے حمایت حاصل ہورہی ہے ۔ یہ واضح ہے کہ انہیں سرحد پار سے تعاون مل رہا ہے “۔ انہوں نے کہا کہ اگر دہشت گرد عام لوگوں ، عمارتوں، پولیس اسٹیشنوں یا لیڈروں کو نشانہ بناتے ہیں، تو فوج ان کو جلد ہی ختم کرنے کی کوشش کرے گی۔ فوج کے انکاؤنٹر میں مسعود اظہر کے بھانجے کے مارے جانے کے بارے میں پوچھے جانے پر فوج کے سربراہ نے کہا کہ “ہمارا بنیادی مقصد دہشت گردی کا خاتمہ کرنا ہے ، بھلے ہی وہ دہشت گرد مسعود اظہر کا بھتیجہ ہو یا کسی دوسرے مذہب کا ہو”۔ وزیر دفاع نرملا سیتا رمن کے اروناچل پردیش میں فارورڈ چوکیوں کے حالیہ دورے پر چین کی ناراضگی کے بارے میں پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ “وزیر دفاع پیشگی چوکیوں پر جوانوں سے ملنے اور ان کے مسائل کے بارے میں جاننے گئیں تھیں۔ یہ دورہ فوجیوں کی حوصلہ افزائی کے لئے تھا۔ وزیر دفاع کو ایسے علاقوں میں جانا ہے جہاں فوج تعینات ہے “۔

TOPPOPULARRECENT