Sunday , September 23 2018
Home / Top Stories / فوجی طاقت ، جنگ کیلئے سب سے بڑی مزاحمت کرنے والی قوت

فوجی طاقت ، جنگ کیلئے سب سے بڑی مزاحمت کرنے والی قوت

ممبئی 16 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) فوجی طاقت کو جنگ کے لئے سب سے بڑی مزاحمت کرنے والی قوت قرار دیتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے کہاکہ دفاعی فورس کو عصری تقاضوں سے آراستہ کیا جائے گا تاکہ کوئی بھی طاقت ملک پر بدنگاہی کی جراء ت نہیں کرسکے گا۔ سب سے بڑے دیسی ساختہ جنگی جہاز آئی این ایس کولکتہ کو قوم کے نام معنون کرنے کے بعد جلسہ سے خطاب کرتے

ممبئی 16 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) فوجی طاقت کو جنگ کے لئے سب سے بڑی مزاحمت کرنے والی قوت قرار دیتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے کہاکہ دفاعی فورس کو عصری تقاضوں سے آراستہ کیا جائے گا تاکہ کوئی بھی طاقت ملک پر بدنگاہی کی جراء ت نہیں کرسکے گا۔ سب سے بڑے دیسی ساختہ جنگی جہاز آئی این ایس کولکتہ کو قوم کے نام معنون کرنے کے بعد جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے نریندر مودی نے کہاکہ جنگ لڑنا اور کامیابی حاصل کرنا ان دنوں کوئی مشکل نہیں رہا ہے۔ لیکن ایک عصری فوج جدید فوجی ہتھیاروں سے مسلح ہوتی ہے تو جنگ کے خلاف مزاحمت کرنے اور کامیابی کے حصول کی ضمانت ہوگی۔

ہم طاقتور ہوں گے تو ہمیں چیلنج کرنے کی کوئی ہمت نہیں کرسکتا۔ جب عوام ہماری فوجی صلاحیتوں کے شعور سے واقف ہوں گے تو ہماری قوم پر بُری نظر ڈالنے کی بھی جرا ء ت نہیں کرے گا۔ تیزی سے ترقی پاتی دنیا اور عالمی تجارت و کامرس میں بحری سکیورٹی کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہاکہ ہندوستان اپنے وسیع تر بحری رقبہ کے ساتھ اہم رول ادا کررہا ہے۔ آنے والے دنوں میں آئی این ایس کولکتہ میری ٹامس تجارت میں مصروف افراد اور اداروں کا اعتماد حاصل کرے گا۔ ہمارے سکیورٹی جوانوں کو یہ محسوس نہیں کرنا چاہئے کہ وہ اپنی قوم کی دفاع میں وہ بہت پیچھے ہیں۔ جب آئی این ایس کولکتہ کو قوم کے نام معنون کیا جائے تو میرے یقین میں اضافہ ہوگا کہ یہ جہاز ہماری فوجی قوت میں اضافہ کرے گا اور ہمارے سپاہیوں کا اعتماد پہلے سے زیادہ مضبوط ہوگا۔ وزیر دفاع ارون جیٹلی اور بحریہ کے سربراہ اڈمرل آر کے دھون بھی اس موقع پر موجود تھے۔ اس جنگی جہاز کو جہاز سازی کی کمپنی میٹرگون ڈاک پارہاس لمیٹیڈ نے تیار کیا ہے۔ جس کا ڈیزائن بحریہ کے ڈیزائن بیورو نے بنایا ہے۔ 6800 ٹن کا یہ جنگی جہاز ٹیکنالوجی کے تمام اُصولوں سے آراستہ ہے۔ ملک میں جہاز سازی کی قابلیت کا ایک نمونہ ہے۔ وزیراعظم نے ہندوستان کے سب سے بڑے جنگی جہاز آئی این ایس وکرما دتیہ کو اس سال جون میں قوم کے نام معنون کیا تھا۔ اقتدار سنبھالنے کے بعد ان کا یہ پہلا اہم کام تھا۔ وزیراعظم نریندر مودی نے مزید کہاکہ اس بدلتی دنیا میں یہ نہ صرف ایک فوجی طاقت ہے بلکہ اس کو ’’ذہنی طاقت و قوت‘‘ کا سرچشمہ قرار دیا جاسکتا ہے

جو ہمارے لئے اہم ہے۔ جہاز سازی نے ہندوستان کی ذہنی صلاحیتوں کا ثبوت دیا ہے۔ ہندوستانی بحری صلاحیتوں کا حوالہ دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہاکہ جیسا کہ میں مہاراشٹرا کے ساحل پر کھڑا ہوکر بحریہ سے مخاطب ہوں یہ فطری طور پر چھترپتی شیواجی کی یاد تازہ کرتا ہے۔ وہ پہلے بہادر انسان تھے جنھوں نے بحری افواج کو مضبوط بنانے کے لئے قدم اُٹھایا تھا۔ وزیر دفاع ارون جیٹلی نے آئی این ایس کولکتہ کی کمیشنگ پر بحریہ کو مبارکباد دی۔ آئی این ایس کولکتہ ہندوستانی بحریہ کے کولکتہ کلاس ڈسٹرائیرس کا حصہ ہوگا جس میں دیگر جنگی جہاز آئی این ایس کوچی اور آئی این ایس چینائی بھی شامل ہیں۔ جنگی جہاز بنانے کی شروعات سپٹمبر 2003 ء میں کی گئی تھی اور اس جہاز کو 2006 ء میں شروع کیا گیا تھا۔ دراصل اس جہاز کو 2010 ء میں ہی بحریہ میں شامل کرنے کا منصوبہ تھا لیکن اس کام میں تاخیر ہوئی ہے۔ جہاز کو آزمائشی مرحلہ میں حادثہ کا شکار ہونا پڑا تھا جس میں ایک بحری عہدیدار کو جان سے ہاتھ دھونا پڑا تھا۔ حادثہ کے وقت جہاز کے آلات کو آتشزدگی سے نقصان پہونچا تھا۔ ایر اڈمرل اے بی سنگھ نے کہاکہ ہندوستان اور اسرائیل کے درمیان مشترکہ وینچر کے ذریعہ طویل مسافت والا زمین سے فضاء میں داغے جانے والا میزائیل تیار کیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT