Monday , November 19 2018
Home / Top Stories / ’فوج کے حوصلہ اور ڈسپلن سے 125کروڑ ہندوستانیوں میں احساس تحفظ‘

’فوج کے حوصلہ اور ڈسپلن سے 125کروڑ ہندوستانیوں میں احساس تحفظ‘

HARSIL, NOV 7 (UNI):- Prime Minister Narendra Modi celebrating Diwali with the jawans of the Indian Army and ITBP, at Harsil, in Uttarakhand on Wednesday. UNI PHOTO-5U

وزیراعظم نے ہند ۔ چین سرحد کی برفانی پہاڑیوں پر سپاہیوں کے ساتھ دیوالی منائی
اترکاشی (اتراکھنڈ) ۔ 7 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے ہند ۔ چین سرحد کے قریب برفانی مقام پر فوج اور انڈوتبتن بارڈر پولیس کے سپاہیوں اور افسروں کے ساتھ دیوالی منائی۔ اس موقع پر وہ کوئی پیمائی کم لباس میں ملبوس تھے۔ انہوں نے دوردراز کے بلندوبالا برفانی مقام پر خدمات و فرائض کی انجام دہی میں ان کی اولالعزمی قوم کو استحکام بخش رہی ہے۔ وزیراعظم نے ہرشل کنٹونمنٹ علاقہ میں جوانوں کو دیوالی تہوار کی مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ وہ (سپاہی) اپنے عہد و ڈسپلن کے ذریعہ 125 کروڑ ہندوستانیوں کے خوابوں اور مستقبل کی حفاظت کررہے ہیں اور عوام میں نڈر پن بے باکی اور تحفظ و سلامتی کا احساس پیدا کررہے ہیں۔ وزیراعظم مودی نے اس موقع پر فوج کے سربراہ جنرل بپن راوت کی موجودگی میں سپاہیوں سے کہا کہ ’’آپ نہ صرف ہماری زمین کے ایک گوشہ کی حفاظت کررہے ہیں بلکہ ملک کی سرحدوں کی حفاظت کے ذریعہ 125 کروڑ ہندوستانیوں کے خوابوں اور زندگیوں کی حفاظت کررہے ہیں۔ وزیراعظم مودی نے فوجی جوانوں اور سپاہیوں کی ’دیا‘ (مٹی کے چراغ) سے تشبیہہ دیتے ہوئے کہا کہ جس طرح دیا خود جلتے ہوئے دنیا کو روشنی پہنچاتا ہے اپ بھی عوام میں ہر طرف خوف و خطر کا احساس ختم کرتے ہوئے بے خوفی و بے باکی کی روشنی پھیلا رہے ہیں۔ فورسیس (سپاہیوں) سے اپنی دیرینہ وابستگی یاد دلاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انہیں اپنے کیریئر کے اوائل میں سپاہیوں کے ساتھ وقت گذارنے کا موقع ملا ہے چنانچہ وہ ان کی ضروریات سے بخوبی باخبر ہیں۔

مودی نے 40 سال سے لیت و لعل کے شکار سابق فوجیوں ’ایک رینک ایک پنشن‘‘ پر عمل آوری کو دفاعی اہلکاروں سے ان کی قریبی وابستگی کا نتیجہ قرار دیا۔ مودی نے کہا کہ ’’آر ایس ایس کے ایک کارکن کی حیثیت سے مجھے فوجیوں آدمیوں کے ساتھ رہنے کا موقع ملا ہے۔ ایک رینک ایک پنشن کے بارے میں میں نے بہت کچھ سنا تھا۔ کئی حکومتیں آئیں اور چلی گئیں لیکن میں چونکہ آپ سے مربوط رہا تھا آپ کی ضروریات، جذبات و احساسات سمجھ سکا۔ چنانچہ وزیراعظم کے عہدہ پر فائز ہونے کے بعد یہ میری ذمہ داری تھی کہ آپ کا خواب پورا کیا جائے‘‘۔ مودی نے کئی سال قبل جب وہ کیلاش مانروا یاترا کا چوتھے انڈو تبتن بارڈر پولیس کے جوانوں کے ساتھ اپنی بات چیت اور روابط کا تذکرہ بھی کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہندوستان کو دفاعی شعبہ میں کئی عظیم کامیابیاں حاصل ہوئی ہیں۔ مودی نے کہا کہ ’’ہندوستانی مسلح افواج کی دنیا بھر میں توصیف اور ستائش کی جاتی ہے۔ مجھے اس وقت کافی فخر ہوتا ہے جب ہندوستانی امن فوج کی صلاحیتوں پر ستائش کی جاتی ہے‘‘۔ وزیراعظم مودی نے اتراکھنڈ میں ہند ۔ چین سرحد کے قریب ہرشل کنٹونمنٹ علاقہ میں 1.15 گھنٹے کا وقت گذارا۔ مقام سطح سمندر سے 7,860 فٹ کی بلندی پر واقع ہے۔ بعدازاں وہ پوجا اور پراجکٹوں کا جائزہ لینے کیدارناتھ پہنچے۔

TOPPOPULARRECENT