Monday , September 24 2018
Home / ہندوستان / فون ٹیاپنگ معاملہ کی سی بی آئی تحقیقات کی درخواست مسترد

فون ٹیاپنگ معاملہ کی سی بی آئی تحقیقات کی درخواست مسترد

احمدآباد 13 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) گجرات ہائیکورٹ نے آج ایک درخواست مفاد عامہ کو مسترد کردیا جس میں مبینہ ریاستی پولیس کی جانب سے 93 ہزار افراد کے ٹیلیفون ٹیاپ کرنے کے الزامات کی سی بی آئی کی جانب سے تحقیقات کروانے کی درخواست کی گئی تھی۔ کارگذار چیف جسٹس وی ایم سہائے اور جسٹس آر ٹی بھولاریا پر مشتمل ایک ڈیویژن بنچ نے کل درخواست مست

احمدآباد 13 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) گجرات ہائیکورٹ نے آج ایک درخواست مفاد عامہ کو مسترد کردیا جس میں مبینہ ریاستی پولیس کی جانب سے 93 ہزار افراد کے ٹیلیفون ٹیاپ کرنے کے الزامات کی سی بی آئی کی جانب سے تحقیقات کروانے کی درخواست کی گئی تھی۔ کارگذار چیف جسٹس وی ایم سہائے اور جسٹس آر ٹی بھولاریا پر مشتمل ایک ڈیویژن بنچ نے کل درخواست مسترد کرتے ہوئے کہاکہ سی بی آئی تحقیقات کا مطالبہ منظور نہیں کیا جاسکتا کیونکہ اِس درخواست میں ریاستی پولیس پر عائد الزامات سے ترک تعلق نہیں کیا گیا۔ درخواست مفاد عامہ وکیل گریش داس نے پیش کرتے ہوئے الزام عائد کیا تھا کہ گجرات پولیس اور حکومت گجرات نے گزشتہ سال 6 ماہ میں 93 ہزار افراد کے ٹیلیفون ٹیاپ کئے ہیں، اِس لئے اِس کی تحقیقات مقامی پولیس کی بجائے سی بی آئی سے کروائی جانی چاہئے۔اُنھوں نے تحقیقاتی کمیٹی کو جس کی صدارت ریٹائرڈ جسٹس سوگنیا بھٹ کررہے ہیں، جو بنگلور کی ایک خاتون کی جاسوسی کے الزامات کی تحقیقات کررہی ہے، کو نظرانداز کرنے کی درخواست بھی مسترد کردی۔

TOPPOPULARRECENT