Friday , November 17 2017
Home / سیاسیات / فڈ نویس کو بھارت ماتا کی جئے کہنے کا اخلاقی حق نہیں

فڈ نویس کو بھارت ماتا کی جئے کہنے کا اخلاقی حق نہیں

اسد اویسی کے خلاف کارروائی نہ کرنے پر شیوسینا کا ردعمل
ممبئی۔/5اپریل، ( سیاست ڈاٹ کام ) چیف منسٹر مہاراشٹرا دیویندر فڈ نویس پر تنقید کا تیر چھوڑتے ہوئے حلیف جماعت شیوسینا نے آج کہا ہے کہ انہیں اس وقت تک بھارت ماتا کی جئے کہنے کا اخلاقی حق نہیں ہے تاوقتیکہ صدر مجلس اتحادالمسلمین اسد الدین اویسی کو جیل کی سلاخوں کے پیچھے نہ کردیں جنہوں نے یہ نعرہ لگانے سے یکسر انکار کردیا تھا۔ شیوسینا نے اس مسئلہ پر ناسک کے ایک جلسہ میں جارحانہ تیور دکھانے کے بعد ٹھنڈا پڑ جانے پر فڈ نویس کا مضحکہ اُڑایا۔شیوسینا کے ترجمان ’ سامنا ‘ کے اداریہ میں کہا گیا ہے کہ ’ بھارت ماتا کی جئے ‘ پر جوش اور ولولہ کا مظاہرہ کرنے کے بعد چیف منسٹر نے اب نرم رویہ اختیار کرلیا ہے جبکہ انہیں پنے بیان سے انحراف کی ضرورت نہیں ہے اور یہ وضاحت کریں کہ انہوں نے ایسا کیوں کیا اور تمام الزامات کومیڈیا کے سر تھوپ دیا گیا۔ شیوسینا نے اسد اویسی کے اس بیان کا حوالہ دیا کہ ان کے گلے پر چاقو بھی رکھ دی جائے تو بھارت ماتا کی جئے کہنے سے انکار کردیں گے اور چیف منسٹر سے دریافت کیا کہ مجلسی لیڈر کے خلاف غداری کا کیس کیوں درج نہیں کیا گیا، اگر تم میں یہ کام کرنے کی جرأت نہیں ہے تو تمہیں ’بھارت ماتا کی جئے‘ نعرہ لگانے کا اخلاقی حق نہیں اور تم ( چیف منسٹر ) بھی اویسی کی طرح قصوروار ٹھہرائے جاؤ گے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT