Monday , February 19 2018
Home / شہر کی خبریں / فہرست رائے دہندگان پر نظر ثانی مہم میں مزید توسیع کا مطالبہ

فہرست رائے دہندگان پر نظر ثانی مہم میں مزید توسیع کا مطالبہ

کئی ناموں کے غیر سائنٹفک طریقہ سے اخراج کا الزام ۔ صدر پردیش کانگریس اتم کمار ریڈی

حیدرآباد۔12 فبروری ( سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اُتم کمار ریڈی نے فہرست رائے دہندگان کی مہم میں مزید تین ہفتوں کی توسیع دینے کا الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا ‘ غیر سائنٹیفک طریقہ سے ووٹوں کا اخراج کرنے کا الزام عائد کیا ۔ آج گاندھی بھون میں تلنگانہ کانگریس کی الیکشن کمیٹی کا جائزہ اجلاس طلب کرنے کے بعد یہ بات بتائی ۔ اس موقع پر اے آئی سی سی انچارج تلنگانہ اُمور آر سی کنٹیا کمیٹی کے صدرنشین ایم ششی دھر ریڈی کے علاوہ دوسرے ارکان موجود تھے ۔ اُتم کمار ریڈی نے کہا کہ 14فبروری تک فہرست رائے دہندگان میں نظرثانی کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا ۔ انتہائی کم وقت دے کر نظرثانی کے عمل کا آغاز کیا گیا ۔ فہرست رائے دہندگان کی نظرثانی کیلئے جو خصوصی کیمپس کا اہتمام کیا گیا تھا اکثر مقامات پر عہدیدار پہنچ نہیں پائے ۔ کانگریس الیکشن کمیٹی کے صدرنشین ایم ششی دھر ریڈی نے ریاست میں ووٹرس لسٹ کی نظرثانی پر تفصیلی روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ میں 5 تا 10 فبروری تک وہ ریاست کے کئی مواضعات اور اضلاع کا دورہ کرتے ہوئے فہرست رائے دہندگان میں نظرثانی کا جائزہ لے چکے ہیں ۔ انہیں کئی شکایتیں وصول ہوئی ہیں کہ نظرثانی کے عمل میں بے قاعدگیاں ہوئی ہیں ‘ غیر سائنٹیفک طریقہ سے ووٹوں کو فہرست سے نکالا گیا ہے ۔ 4 تا 11فبروری تک فہرست رائے دہندگان پر نظرثانی کیلئے خصوصی مہم کا اہتمام کیا گیا ۔ الیکشن کمیشن کے اعلان کے مطابق کئی مواضعات میں اہتمام کردہ خصوصی کیمپ میں عہدیدار پہنچے ہی نہیں ۔ ایسے موقع پر رائے دہندے کس کے سامنے اپنی شکایت پیش کریں گے ۔ یہاں تک کہ اسمبلی سطح کے الکٹورل رجسٹریشن عہدیدار بھی عوام کو دستیاب نہیں تھے جس سے رائے دہندے اپنی شکایت درج کرانے سے محروم رہ گئے ۔ یہاں تک کہ انہیں ٹیلیفون کرنے پر بھی کوئی ردعمل حاصل نہیں ہوا ۔ اس موقع پر صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اُتم کمار ریڈی نے مداخلت کرتے ہوئے ششی دھر ریڈی کو مشورہ دیا کہ وہ الیکشن کمیشن کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے اس مہم میں مزید تین ہفتوں کی توسیع کرنے پر زور دیں ۔ ششی دھر ریڈی نے بتایا کہ فہرست رائے دہندگان سے ابھی تک کتنے نام حذف کئے گئے الیکشن کمیشن نے اس کی صحیح طریقہ سے وضاحت نہیں کی ۔ فہرست رائے دہندگان سے جو نام نکالے گئے ہیں اسمبلی سطح پر اس کی فہرست پیش کرنے کی الیکشن کمیشن سے نمائندگی کی گئی مگر الیکشن کمیشن نے اس پر ہنوز کوئی مثبت ردعمل کا اظہار نہیں کیا ۔

TOPPOPULARRECENT