Tuesday , November 13 2018
Home / Top Stories / فیس بک پر صارف کی تفصیلات ، سرقہ کے بعد 100 روپئے میں فروخت

فیس بک پر صارف کی تفصیلات ، سرقہ کے بعد 100 روپئے میں فروخت

شخصی معلومات ، افراد خاندان کی تصاویر ، بینک تفصیلات اپ لوڈ کرنے میں احتیاط ضروری
حیدرآباد ۔ 8 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : فیس بک آج ہماری زندگی کا ایک اہم جز بن چکا ہے ۔ جہاں ہم اپنی تصاویر ، تبصرے ، خیالات ، مشاہدات اور بہت کچھ اپ لوڈ کرتے رہتے ہیں اور خاص لڑکیوں کو یہ مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ اپنی یا اپنے افراد خاندان کی کوئی تفصیل فیس بک پر پوسٹ نہ کریں لیکن حالیہ انکشاف نے لڑکیاں تو درکنار فیس بک کے ہر صارف کو حیران کردیا ہے کیوں کہ رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ فیس بک پر صارف کا ڈیٹا صرف 100 روپئے میں ڈارک ویب کو فروخت کردیا جاتا ہے ۔ ڈارک ویب دراصل ڈیپ ویب کا ایک حصہ ہے اور ڈیپ ویب سائبر دنیا کا وہ مواد ہے جو کہ شرح انجن کی دسترس سے باہر ہے اور سرچ انجن بھی اس مواد کی تلاش میں ناکام رہتا ہے ۔ ڈیپ ویب پر بچوں کے فحش ویڈیوز ، منشیات ، کرایے کے قاتل اور جرائم کی بہت بڑی دنیا موجود ہے اور سوشیل میڈیا کے ماہرین سے درد مندانہ اپیل بھی ہوتی ہے کہ چونکہ نیٹ کا 90 فیصد حصہ ڈارک نیٹ کی ٹرافک پر مشتمل ہے ۔ لہذا اس خطرے سے عام صارفین کو محفوظ رکھا جائے ۔ کیاسپر اسکائی کی جانب سے تازہ ترین مطالعے کے بعد جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مسروقہ سوشیل میڈیا اکاونٹس سے بینک کی تفصیلات ، پرسنل کمپیوٹر کو کسی دوسرے مقام سے استعمال کے قابل بنانا اور اس کے علاوہ مصروف خدمات اوبر اور نیٹ فلکس کی تفصیلات بھی حاصل کرلی جاتی ہیں ۔ ان تمام حالات کے بعد ماہرین نے یہ کہا ہے کہ جہاں فیس بک ہر صارف کے مواد کو صرف 100 روپئے میں فروخت کیا جارہا ہے وہیں ان صارفین کو چاہئے کہ سوشیل میڈیا کو صرف سماجی مصروفیات تک محدود رکھیں اور یہاں بینک اور دیگر حساس معلومات کے مواد کو شامل کرتے ہوئے اپنے لیے مسائل نہ پیدا کرلیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT