Tuesday , December 11 2018

فیس کی ادائیگی میں تاخیر پر کمسن طالبہ علم کو ٹیچر کی بے رحمی سے مارپیٹ

حیدرآباد /10 اپریل ( سیاست نیوز ) کمسن طالب علم کو بے رحمی سے زدوکوب کرنے کا واقعہ طول اختیار کرگیا ہے ۔ یاد رہے کہ میرپیٹ علاقہ کے کرشنا وینی اسکول میں 4 سالہ طالب علم کو اسکول ٹیچر نے بری طرح مارپیٹ کرتے ہوئے شدید زدوکوب کیا ۔ اس بچہ کی حالت دیکھ کر دیگر اولیائے طلبہ اور عام شہری بھی برہم ہوگئے ۔ جس کو اسکول ٹیچر نے مبینہ طور پر فیس کی ادائیگی میں تاخیر پر سنگ دلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بری طرح مارپیٹ کا نشانہ بنایا ۔ آج واقعہ کے خلاف بائیں بازو کی طلبہ تنظیم ایس ایف آئی نے اسکول پر زبردست احتجاج منعقد کیا ۔ واقعہ کی اطلاع کے بعد کمشنر پولیس رچہ کنڈہ سخت اقدامات کی ہدایت دی اور اس معاملہ پر سخت کارروائی انجام دی گئی ۔ احتجاج اور مطالبہ کے پیش نظر پولیس سے کرشنا وینی اسکول میرپیٹ کے ڈائرکٹر گوپال ریڈی پرنسپل پدمجا اور اسکول ٹیچر سورنا کو حراست میں لے لیا ۔ تاہم بچوں کے حقوق کی تنظیم بالالہ مکولہ سنگھم نے اس کارروائی کو ناکافی قرار دیا ہے اور اسکول کو مہربند کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ بتایا جاتا ہیکہ 4 سالہ لڑکے نکھیل یادو کو اسکول ٹیچر سورنا نے بے رحمی سے مارپیٹ کا نشانہ بنایا جس کے سبب اس کے بدن پر نشانات رونما ہوگئے ۔ اس سنگ دلی کو دیکھتے ہوئے مقامی عوام نے کافی برہمی ظاہر کی ۔ پولیس میرپیٹ نے مقدمہ درج کرلیا ہے اور مصروف تحقیقات ہے ۔

TOPPOPULARRECENT