Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / فیض آباد کا بجرنگ دل سربراہ مہیش مشرا گرفتار

فیض آباد کا بجرنگ دل سربراہ مہیش مشرا گرفتار

ٹریننگ کیمپ میں لاٹھیاں، تلوار اور بندوقیں لہرانے پر کارروائی
فیض آباد ۔ 25 مئی (سیاست ڈاٹ کام) فیض آباد کے بجرنگ دل سربراہ اور ایودھیا کے شعبہ کے صدر مہیش مشرا کو آج گرفتار کرلیا گیا کیونکہ انہوں نے مبینہ طور پر مسلمانوں کے مذہبی جذبات مجروح کئے تھے اور فرقہ وارانہ نفرت پھیلائی تھی۔ دائیں بازو کی انتہاء پسند ہندو تنظیم نے ہتھیاروں کی تربیت کا ایک پروگرام 14 مئی کو منعقد کیا تھا۔ 50 کارکنوں کے خلاف نقص امن و فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے الزامات کے تحت ایک ایف آئی آر درج کرلیا گیا ہے۔ ان کارکنوں کے خلاف ایف آئی آر کیا گیا تھا۔ بجرنگ دل کے ذمہ داروں اور کارکنوں پر امن، ضبط و قانون اور فرقہ وارانہ آہنگی کو متاثر کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں ایودھیا کوتوالی پولیس اسٹیشن میں کل رات بجرنگ دل کارکنوں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔ واضح رہیکہ دائیں بازو کی ہندو انتہاء پسند تنظیم نے اپنے کارکنوں کو اسلحہ چلانے کی تربیت دینے کیلئے ایودھیا میں ’’سیلف ڈیفنس‘‘ کیمپ منعقد کیا تھا۔ اس دوران بجرنگ دل کے زیرانتظام چلائے جانے والے بعض اسکولوں میں منعقدہ کیمپوں میں زعفرانی کارکنوں کی جانب سے لاٹھیاں، تلواریں اور رائفلس لہراتی ہوئی تصاویر بعض میڈیا چینلوں پر گشت کرنے لگے تھے۔ سخت گیر انتہاء پسند گروپ بجرنگ دل اس نظریہ کی حامل ہیکہ ہندو نوجوانوں کو مارشل آرٹس اور اسلحہ چلانے کی تربیت دینے کی ضرورت ہے کیونکہ ہندو برادری کو کسی مبینہ خطرہ کی صورت میں تحفظ کیلئے پولیس یا سیاستدانوں پر انحصار کی ضرورت باقی نہ رہے۔

TOPPOPULARRECENT