Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / فیض عام ٹرسٹ کی جانب سے چار غریب خاندانوں کو مالی امداد

فیض عام ٹرسٹ کی جانب سے چار غریب خاندانوں کو مالی امداد

سیونگ مشین اور دیگر سامان کی تقسیم ، بچوں کے تعلیمی اخراجات برداشت کرنے کا اعلان
حیدرآباد ۔ 22 ۔ مارچ : ( نمائندہ خصوصی ) : خدمت خلق سب سے بڑی عبادت ہے ۔ کمزوروں ، محتاجوں ، بے بسوں ، مظلوموں ، یتیم و یسیروں اور غرباء و مساکین کی مدد کرنے میں جو ذہنی و قلبی سکون اللہ تعالیٰ عطا کرتے ہیں اسے الفاظ میں بیان نہیں کیا جاسکتا ۔ ہمارا شہر حیدرآباد فرخندہ بنیاد انسانیت نوازی کے لیے شہرت رکھتا ہے ۔ اس شہر میں ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں کی قیادت میں روزنامہ سیاست جو ملی خدمات انجام دے رہا ہے اسے سارے ہندوستان میں قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے ۔ سیاست کے ان فلاحی کاموں میں فیض عام ٹرسٹ بھی شامل ہے جس نے 1983 میں اپنے قیام سے بے شمار ضرورت مندوں کی مدد کی ۔ چنانچہ آج دفتر فیض عام ٹرسٹ بابو خاں اسٹیٹ بشیر باغ میں 4 مستحق خاندانوں کی نقد رقومات اور ساز و سامان کی شکل میں مدد کی گئی ۔ اس طرح ان چار خاندانوں کی مدد پر جملہ 106200 روپیوں کے مصارف آئے ۔ واضح رہے کہ پولیو سے متاثرہ تسلیم بیگم کو جنہیں ٹیلرنگ اور تیار ملبوسات کے کاروبار کا 12 سالہ تجربہ ہے ۔ Equally Able Foundation کے تعاون سے 10 ہزار روپئے مالیتی ملبوسات دلائے گئے اور 5500 روپئے مالیتی سلائی مشین فراہم کیا گیا ۔ تسلیم بیگم کے شوہر ماہانہ 5000 روپئے کماتے ہیں ۔ فیض عام ٹرسٹ نے ان کی 9 ویں جماعت میں زیر تعلیم بیٹی کے تعلیمی خرچ کی ذمہ داری بھی لی ہے اور اس کی فیس کے طور پر 16750 روپئے ادا کئے ۔ دفتر فیض عام ٹرسٹ میں آج ٹرسٹی سکریٹری فیض عام ٹرسٹ جناب افتخار حسین ، آر بی آئی کے ممبر فار بزنس امبیڈ سمین جناب انیس حسین ، مسٹر نسیم احمد صنعت کار اور ڈاکٹر آصف علی خاں کی موجودگی میں ایک بیوہ خاتون سلمیٰ سلطانہ کو بھی 5500 کا سلائی مشین حوالے کیا گیا ۔ اس سے پہلے انہیں ٹیلرنگ کورس کروایا گیا جس کی 3000 روپئے فیس بھی فیض عام ٹرسٹ نے ادا کی وہ اپنے شوہر کے انتقال کے بعد پیٹی کوٹ کا کام کرتے ہوئے 1800 تا 2000 روپئے کمایا کرتی تھیں ۔ فیض عام ٹرسٹ نے ان کے تین بیٹیوں اور ایک بیٹے کی تعلیمی ذمہ داری بھی لی ہے ۔ رائل انڈین ہائی اسکول کشن باغ نے V اور III میں زیر تعلیم ان کے دو بچوں کی ایک سال کی فیس معاف کردی ۔ اس خاندان پر تعلیمی شعبہ میں 30300 روپئے خرچ کیے 6000 روپئے کا راشن بھی فراہم کیا گیا ۔ فیض عام ٹرسٹ نے ایک اور غریب خاتون غوثیہ بیگم کے ارکان خاندان کی بھی مالی مدد کی ۔ اسے مسجد عالیہ کے پاس لوگوں سے دست سوال کرتے ہوئے دیکھ کر جناب افتخار حسین نے ٹرسٹ کے دفتر طلب کیا اور کونسلنگ کرتے ہوئے باوقار زندگی کی ترغیب دی ۔ اب وہ خاتون ملک پیٹ میں ایک ضعیف خاتون کی خدمت پر مامور ہے ۔ ماہانہ اسے 4000 روپئے تنخواہ ملتی ہے ۔ فیض عام ٹرسٹ نے غوثیہ بیگم کے بیٹے کو کنجیاں بنانے کی دکان کھولنے میں مدد کرتے ہوئے 26500 روپئے کا مشین دلایا ۔ آج دفتر فیض عام ٹرسٹ مشیر آباد کی رہنے والی شاہدہ بیگم کو بھی امداد فراہم کی گئی ۔ اس خاتون کے مکان میں گیس سیلنڈر کے باعث آتشزدگی کا واقعہ پیش آیا تھا جس میں سارا سامان جل کر خاکستر ہوگیا تھا ۔ ایم آر او نے دورہ کرتے ہوئے 25000 تا 30000 روپئے نقصانات کا اندازہ لگایا تھا لیکن آج تک حکومت سے کوئی امداد موصول نہیں ہوئی ۔ فیض عام ٹرسٹ نے شاہدہ بیگم کے بچوں کی فیس ادا کی اور 2000 روپئے مالیتی گھریلو استعمال کا سامان دلایا ۔ اس کار خیر میں سیاست ملت فنڈ نے بھی مدد کی ۔ جناب افتخار حسین نے بتایا کہ یہ فلاحی خدمات عطیہ دہندگان کے تعاون کے باعث انجام دی جاتی ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT