Tuesday , July 17 2018
Home / شہر کی خبریں / فیض عام ٹرسٹ کے ذریعہ تین برسوں میں غریب طلبہ اور خاندانوں کو 2.99 کروڑ کی امداد

فیض عام ٹرسٹ کے ذریعہ تین برسوں میں غریب طلبہ اور خاندانوں کو 2.99 کروڑ کی امداد

غریب طلبہ کو ڈاکٹر ، انجینئر اور اعلیٰ تعلیم دلانے میں ٹرسٹ کا اہم رول،سیاست ملت فنڈ کا تعاون و اشتراک مثالی
حیدرآباد ۔ 17 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : شوہر آٹو ڈرائیور ، دو بیٹے اور ایک بیٹی ، شوہر نے اس خاتون کو بچوں سمیت بے یار و مددگار چھوڑ دیا لیکن اس خاتون نے ہمت نہیں ہاری ۔ لوگوں کے گھر میں پکوان کر کے ماہانہ 1000 روپئے کمانے لگی ۔ لیکن خرابی صحت کے باعث وہ اب کام نہیں کررہی ہیں ۔ لیکن شائد آپ اس خاتون کی کہانی سن کر یقینا اُسے سلام کریں گے ۔ ہاں ہم بات کررہے ہیں محترمہ کریم النساء کی ، اس خاتون نے حالات کا پامردی سے مقابلہ کیا اور فیض عام ٹرسٹ نے ان کی بھر پور مدد کی ۔ اعزازی سکریٹری و ٹرسٹی فیض عام ٹرسٹ کے بقول اس ٹرسٹ نے دوسرے ٹرسٹوں کی بہ نسبت اپنا ایک علحدہ انداز اپنایا ہے ۔ پرائمری تعلیم اور خاص کر لڑکیوں کی تعلیم پر توجہ مرکوز کی ہے ۔ چنانچہ کریم النساء کی مدد کے لیے پرائمری تعلیم پر ہی توجہ مرکوز کی گئی اور فیض عام ٹرسٹ نے کریم النساء کے بیٹوں سید حسن ، سید یسین اور بیٹی صبا بیگم کو اپنا کر ان کی مکمل تعلیم کا بیڑا اٹھایا ۔ نتیجہ میں آج کریم النساء کے بیٹے سید حسن ایم بی بی ایس ڈاکٹر بن گئے ہیں ۔ ان کی بیٹی صبا بیگم ایم بی بی ایس کررہی ہیں ۔ بڑا بیٹا سید یسین نے حفظ کیا ہے اور انٹر میڈیٹ کررہا ہے ۔ اسی طرح کریم النساء کے بچوں کے خوابوں کی تکمیل کے لیے اللہ تعالیٰ نے فیض عام ٹرسٹ کو ذریعہ بنایا ۔ فیض عام ٹرسٹ میں ایک خصوصی تقریب منعقد ہوئی جس میں محترمہ فرخ پروین جمال چیرپرسن فیض عام ٹرسٹ اورنگ آباد ، محترمہ فرحت یاسمین ٹرسٹی فیض عام ٹرسٹ سراج طاہر ٹرسٹی فیض عام ٹرسٹ اور دیگر نے بطور خاص شرکت کی اور فیض عام ٹرسٹ کی مالی امداد حاصل کر کے ترقی کے منازل طئے کرنے والے ان طلباء وطالبات کی کہانیاں سنی جو انتہائی غریب خاندانوں سے تعلق رکھتی ہیں کسی کے والد آٹو چلاتے ہیں تو کوئی ٹیلر کی حیثیت سے کام کرتے ہوئے اپنی زندگی کی گاڑی آگے بڑھا رہے ہیں ۔ کسی کی ماں بیڑی بنانے کا کام کرتی ہیں ۔ ڈاکٹر سمیع اللہ خاں ڈائرکٹر شاداں کالج و میسکو ( رکن عاملہ فیض عام ٹرسٹ ) ، ڈاکٹر شوکت علی مرزا صدر ہیلپنگ ہینڈ جناب علی عابدی سوشیل ورکر ( لندن ) ، مدثر عالم صاحب ( امریکہ ) ، جمیل حیدر صاحب ( امریکہ ) ، فخری صاحب ( امریکہ ) ، انیس افتخار علی ( امریکہ ) ، رقیہ بیگم ( امریکہ ) ، سید حیدر علی رکن عاملہ فیض عام ٹرسٹ ، اعجاز حسین امریکہ ، جعفر احمد صاحب امریکہ ، سید جعفر حسین صدائے حسینی ، حامد علی ، ڈاکٹر شوکت حیات ، بشیر فاروقی سابق ڈی ای او ملت کے ان نادار لیکن نایاب طلبہ کی تعلیمی کامیابیوں کی داستانیں اور اس میں فیض عام ٹرسٹ کے کردار کے بارے میں سن کر مسرت کا اظہار کیا اور بارگاہ رب العزت میں سجدہ شکر بجالایا کہ ہمارے درمیان اس طرح کے بے لوث ادارے بھی شامل ہیں ۔ جن میں فیض عام ٹرسٹ اور سیاست ملت فنڈ نمایاں ہے ۔ جناب عبدالستار کی قرات کلام پاک سے جلسہ کا آغاز ہوا ۔ ٹرسٹی جناب رضوان حیدر نے مہمانوں کا خیر مقدم کیا ۔ آمنہ سحر نے متاثر کن انداز میں کارروائی چلائی ۔ آپ کو بتادیں کہ فیض عام ٹرسٹ کریم النساء کے بچوں کی کفالت 2001 سے کررہا ہے اور ان کے تمام تعلیمی اخراجات برداشت کرتا ہے ۔ سید حسن کو ایم بی بی ایس میں فری سیٹ ملی تھی ۔ اس خاندان کی مالی مدد میں جناب علی اصغر کا نمایاں رول ہے ۔ ہاجرہ بیگم کی کہانی بھی دلچسپ ہے یہ لڑکی ایم بی بی ایس سال دوم کررہی ہے ۔ اس نے بتایا کہ ان کے والد ٹیلر ہیں اور ماں بیڑیاں بناتی ہیں ۔ دو بہنیں ہیں ۔ ایک بھائی کا انتقال ہوچکا ہے ۔ اس لڑکی نے 10 ویں جماعت تک تلگو میڈیم سے تعلیم حاصل کی اور انٹر میڈیٹ انگریزی میڈیم سے کیا ۔ ایم بی بی ایس سال اول میں امتیازی کامیابی حاصل کی ۔ سال اول کی فیس میس وغیرہ کے اخراجات ماں باپ نے زیورات رہن رکھ کر ادا کئے ۔ ڈاکٹر مخدوم محی الدین کی اہلیہ ڈاکٹر شائستہ محمدی حسینی کو واٹس اپ پر مدد کے لیے صابرہ بیگم سے ایک پیام وصول ہوا تھا جسے انہوں نے سکریٹری فیض عام ٹرسٹ کو فارورڈ کردیا ۔ اس طرح ٹرسٹ نے اس لڑکی کے میس کی فیس 30 ہزار روپئے ادا کئے اور رہن رکھے گئے سونے کو چھڑانے کے لیے 127000 روپیوں کا انتظام کیا ۔ ٹرسٹ نے پرائمری ایجوکیشن کے لیے سال 2016-17 میں 59.81 لاکھ ، تکنیکی تعلیم کے لیے 21.21 لاکھ روپئے ، راحت کاری کے لیے 29.50 لاکھ ، علاج و معالجہ کے لیے 07.85 لاکھ روپئے خرچ کئے ۔ اسی طرح اپریل 2017 تا جنوری 2018 اس میں بالترتیب 40.46 لاکھ ، 21.21 لاکھ ، 18.68 لاکھ روپئے اور 3.58 لاکھ روپئے خرچ کئے گئے ۔ جناب افتخار حسین کے مطابق فیض عام ٹرسٹ وہ فلاحی شمع ہے جسے 1983 میں ان کے بہنوئی ذوالفقار حسین نے روشن کی ۔ اور اس کی روشنی حیدرآباد میں پھیل گئی ۔ فیض عام ٹرسٹ کو روزنامہ سیاست اور ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خاں کا بھر پور تعاون حاصل ہے ۔ فی الوقت فیض عام ٹرسٹ 1456 طلبہ کی مدد کررہا ہے ۔ جن میں 625 طلبہ کا تعلق پرائمری ایجوکیشن 731 کا ایس ایس سی کے بعد اعلیٰ تعلیم سے ہے ۔ 1237 طلبہ انٹر میڈیٹ ، ڈگری ، پی جی ، انجینئرنگ ، ایم بی اے ، ایم بی بی ایس اور پیرا میڈیکل کورسیس سے تعلق رکھتے ہیں ۔ فیض عام ٹرسٹ نے 1256 مریضوں کا علاج بھی کروا رہا ہے ۔ 2280 مرد و خواتین کی باز آباد کاری کی جارہی ہے ۔ سیاست ملت فنڈ کے اشتراک و تعاون کے ذریعہ کپڑا بینک بھی چلایا جارہا ہے ۔ ستمبر 2016 سے تاحال 1552 خاندانوں نے کپڑا بینک سے استفادہ کیا ۔ مظفر نگر ( یو پی ) کے تباہ حال مسلمانوں کی بھی سیاست ملت فنڈ کے ساتھ مل کر مدد کی گئی ۔ حیدرآباد کی پہلی مسلم خاتون پائلٹ سلویٰ فاطمہ اور ثانیہ صدیقی کی مالی مدد کی گئی ۔ سیاست کے بیت المعمرین کے لیے 5 لاکھ روپئے عطیہ دیا گیا ۔ ایم بی بی ایس طالبہ نزہت فاطمہ ، ایم ڈی کے طالب علم شیخ نذیر احمد اور عائشہ کی مدد کی گئی اس طرح پچھلے تین برسوں میں فیض عام ٹرسٹ نے پرائمری ایجوکیشن کے لیے 1.62 کروڑ ٹیکنیکی ایجوکیشن کے لیے 43.33 لاکھ باز آبادکاری کے لیے 71.15 لاکھ روپئے اور علاج و معالجہ کے لیے 23.35 لاکھ روپئے خرچ کئے گئے ۔۔
پوسٹ میٹرک ، انٹر تا پی جی امیداروں کے لیے آن لائن رجسٹریشن
حیدرآباد ۔ 17 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : تلنگانہ حکومت کے اسٹیٹ میناریٹی اسکالر شپ کے لیے انٹر تا پی جی اور پی جی ڈی سطح تک کے امیدواروں کے لیے پوسٹ میٹرک اسکالر شپ کے لیے آن لائن رجسٹریشن کے لیے 10 فروری تک توسیع کی گئی ہے ۔ امیدوار ای پاس پر آن لائن رجسٹریشن کروائیں توسیع شدہ تاریخ سے استفادہ کرتے ہوئے اسکالر شپ حاصل کرسکتے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT