Tuesday , December 11 2018

فیڈرر کا شاندار مظاہرہ ‘ سویٹزر لینڈ 22 برس بعد فائنل میں

جنیوا15 ستمبر ( سیاست ڈاٹ کام) سابق عالمی نمبر ایک ٹینس کھلاڑی راجر فیڈرر نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے سوئٹزرلینڈ کو ڈیوس کپ کے فائنل میں پہنچا دیا۔ سوئٹزرلینڈ نے 22 برس بعد فیصلہ کن مقابلہ تک رسائی حاصل کی ہے۔ اس نے پہلی اور آخری مرتبہ 1992 میں ڈیوس کپ فائنل کھیلا تھاجہاں اسے امریکہ کے خلاف شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ ایونٹ میں کھیلے گئے سنگلز میں فیڈرر نے عالمی نمبر 17 اٹلی کے فابیو فوگنینی کو 2-6،3-6 اور 6-7 سے شکست دی ۔ قبل ازیں سوئٹزر لینڈ کے راجر فیڈرر اور واورنکا نے سیمی فائنل بیسٹ آف فائیو ٹائی کے پہلے دن دونوں سنگلز مقابلے جیتے تھے۔سوئس ٹیم نے مہمان اٹلی کے خلاف 2-0کی سبقت حاصل کی۔ ڈبلز میں فابیو فوگ نینی اورسیمون بلیلی کی اطالوی جوڑی نے شاندار واسپی کی اور سوئٹزرلینڈ کے تجربہ کار کھلاڑی فیڈرر اور واورنکا کیخلاف پانچ سیٹ کے سخت ترین مقابلہ میں کامیابی حاصل کی ۔ اطالوی جوڑی نے 7-5 ،3-6 ‘ 5-7 ‘ 6-3 ‘ 6-2 سے کامیابی حاصل کی اور اپنی ٹیم کے خسارا کم کرکے 2-1کردیا۔ بعدازاں ایندریس سیپی نے لیمر کو شکست دے کر مقابلہ 2-2 سے برابر کردیا تھا۔ فیڈرر نے فیصلہ کن سنگلز میچ جیت کر اپنے ملک کو تاریخی کامیابی دلائی۔فائنل میں اس کا سامنا فرانس سے ہوگا جس نے چیک جمہوریہ کو شکست دیکر فائنل میں جگہ بنائی ہے۔ فرانس نے 3-0 کی فیصلہ کن برتری کے ساتھ دس سال بعد ڈیوس کپ فائنل کیلئے کوالیفائی کرلیا‘ جو 21 تا 24 نومبر تک کھیلا جائے گا۔ دریں اثنا 28 مرتبہ کی ڈیوس کپ چیمپئن آسٹریلیا نے ازبکستان کو کلین سویپ کر کے ورلڈ گروپ کیلئے کوالیفائی کر لیا۔ ورلڈ گروپ آئندہ سال کھیلا جائے گا۔ پہلے سنگل میچ میں آسٹریلیا کے سیم گروتھ نے ازبکستان کے ٹرنر اسمالیوف کو 6-3 اور 6-2 سے شکست دی۔ ایک اور میچ میں آسٹریلیائی نک کیرگوس نے سانجر فیازوف کو یکطرفہ مقابلے کے بعد 6-1 ‘ 6-1 سے شکست دی۔ واضح رہے کہ ٹائی کے پہلے روز لیٹن ہیوٹ اور نک کیرگوس نے سنگلز جبکہ لیٹن ہیوٹ اور ڈینس نے ڈبلز میں کامیابی حاصل کی تھی۔ دریں اثناء ہندوستان کے جنوبی شہر بنگلور میں ہندوستان اور سربیا کے درمیان منعقدہ مقابلوں میں ہندوستان کو 2-3 کی شکست برداشت کرنی پڑی جیساکہ بارش سے متاثرہ آخری مقابلہ میں میزبان کھلاڑی یوکی بھامبری کو فلپ کرجینویک کے خلاف 6-3‘ 6-4 ‘ 6-4 کی شکست برداشت کرنی پڑی ۔ فلپ مہمان سربیائی ٹیم کے لئے ہیرو ثابت ہوئے کیونکہ اس مقابلہ سے قبل ڈبلز میں روہن بوپنا اور لینڈر پیس نے کامیابی حاصل کی تھی اس کے بعد ہندوستان کے نمبر ایک کھلاڑی سمدیو دیورمن نے سنسنی خیز کامیابی حاصل کرتے ہوئے ہندوستان کو 2-2 کی اہم کامیابی دلوائی تھی جیساکہ انہوں نے ڈوسن جووچ کے خلاف ایک ایسی کامیابی حاصل کی جس کی ہندوستانی شائقین امید کر رہے تھے ۔ مقابلے 2-2سے برابر ہونے کے بعد تمام تر توجہ یوکی پر مرکوز ہوچکی تھی لیکن انہیں یکطرفہ مقابلہ میں شکست برداشت کرنی پڑی ۔ سربیا کے خلاف شکست کا مطلب ہندوستانی ٹیم کو 2015 سیزن میں ایشیاء؍ اوشینیا میں اپنے مقام کے لئے پھر سے جدوجہد کرنی پڑگی ۔

TOPPOPULARRECENT