Tuesday , August 21 2018
Home / کھیل کی خبریں / فیڈرر کی پیشقدمی،سرینا کو وینس کے خلاف شکست

فیڈرر کی پیشقدمی،سرینا کو وینس کے خلاف شکست

انڈین ویلز۔13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) عالمی نمبر ایک ٹینس کھلاڑی سوئٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر نے ایک گھنٹے سے بھی کم وقت میں فلپ کرازنووچ کو شکست دیتے ہوئے یہاں بی این پی پاریبس اوپن ٹینس ٹورنمنٹ کے چوتھے راؤنڈ میں جگہ بنا لی ہے ۔مرد سنگلز کے تیسرے راؤنڈ میں فیڈرر نے بہترین سروس اور زبردست گراؤنڈاسٹروک کھیلتے ہوئے آسانی سے سربیا ئی کھلاڑی کے خلاف 6۔2، 6۔1 سے کامیابی اپنے نام کر لی۔36 سالہ فیڈرر خراب موسم کی وجہ سے مسلسل تیسرے دن میچ کھیلنے اترے لیکن انہوں نے میدان پر مکمل توانائی کے ساتھ کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔اس سے پہلے فیڈرر کا فریڈریکو ڈیلبونس کے خلاف تیسرے راؤنڈ کا میچ بارش سے متاثر رہا تھا اور وہ اگلے دن میچ مکمل کر سکے تھے ۔انہوں نے فلپ کے خلاف میچ میں پہلی سروس پر89 فیصد نشانات حاصل کئے اور چھ ایس لگائے اور ایک دوہری غلطی کیا۔وہیں پہلی مرتبہ سوئس ماسٹر کا سامنا کر رہے ہسپانوی کھلاڑی کے پاس فیڈرر کے کھیل کا کوئی جواب نہیں تھا اور وہ93 میں سے31 نشانات ہی جیت پائے ۔ٹورنمنٹ سے رافیل نڈال، اسٹنسلاس واورنکا اور اینڈی مرے جیسے بڑے کھلاڑی باہر ہیں جبکہ نوواک جوکووچ اور کائی نشیکوری ابتدائی دور میں ہی باہر ہو چکے ہیں جس کے بعد فیڈرر ٹورنمنٹ میں ٹاپ کھلاڑی باقی ہیں اور ریکارڈ چھٹے انڈین ویلز خطاب کے مضبوط دعویدار مانے جا رہے ہیں۔فیڈرر نے کامیابی کے بعد کہا کہ وہ ایک وقت میں ایک ہی مقابلے پر توجہ دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں سیمی فائنل یا فائنل کے بارے میں نہیں سوچ رہا ہوں۔مجھے لگتا ہے کہ یہ غلط ہو گا۔میں فی الحال اچھی تال میں ہوں اور اسے برقرار رکھنا چاہتا ہوں۔ٹاپ سیڈ کھلاڑی اگلے میچ میں فرانس کے جرمي چارڈي سے نبرد آزما ہوں گے جنہوں ہم وطن ایڈرین مناریو کو شکست دی۔دیگر میچوں میں پانچویں سیڈ ڈومنیکن تھیم پابلو کیوواس کے خلاف 6۔3 ،4۔6 ،2۔4 کے اسکور پر ریٹائر ہو گئے ۔امریکہ کے 20 سالہ ٹیلر نے فرنانڈو ورداسکو کو 4۔6 ،6۔2 ،7۔6 سے شکست دی۔خاتون زمرے میں امریکہ کی وینس ولیمز نے پیشہ ورانہ ٹینس میں واپسی کے لئے کوشاں اپنی چھوٹی بہن اور23 گرانڈ سلام چمپئن سرینا کو تیسرے راؤنڈ 6۔3 ،6۔4 سے شکست دی۔بچی کی پیدائش کے تقریبا ایک سال بعد واپسی کر رہی سرینا نے اگرچہ دوسرے سیٹ میں 2۔5 سے پچھے رہنے کے بعد اچھی جدوجہد کی اور میچ پوائنٹس بھی بچایا لیکن آخری گیموں میں غلطیاں کر بیٹھیں۔اپنی چھوٹی بہن کو شکست دینے کے بعد وینس نے کہا کہ وہ کبھی بھی سرینا کے23 گرانڈ سلام کے ریکارڈ کے بارے میں نہیں سوچتی ہیں، میں مانتی ہوں کہ جب تک میچ مکمل طور ختم نہ ہو وہ ختم نہیں سمجھا جاتا۔وہ واپسی کرتی رہتی ہیں اور میں آج کے میچ میں خوش قسمت رہی کیونکہ میں نے گزشتہ ایک سال میں ان سے زیادہ میچ کھیلے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT