Friday , April 20 2018
Home / شہر کی خبریں / ف12 فیصد مسلم تحفظات پر حکمران جماعت ٹی آر ایس کی خاموشی پر اظہارتشویش

ف12 فیصد مسلم تحفظات پر حکمران جماعت ٹی آر ایس کی خاموشی پر اظہارتشویش

مولانا ابوالکلام آزاد کو خراج، گاندھی بھون میں تقریب، اتم کمار ریڈی و دیگر کے خطبات
حیدرآباد ۔ 11نومبر (سیاست نیوز) سکریٹری انچارج تلنگانہ کانگریس امور آر سی کنٹیا نے مولانا ابوالکلام آزاد کے نظریات اور خدمات کو نوجوان نسل کیلئے مشعل راہ قرار دیتے ہوئے انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ محمد خواجہ فخرالدین کی صدارت میں مولانا آزاد کی یوم پیدائش کے موقع پر گاندھی بھون کے پرکاشم ہال میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا۔ اس موقع پر صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی، سابق رکن پارلیمنٹ رنجن کمار یادو، محمد سراج الدین صدر مہیلا کانگریس اپلا شاردا جنرل سکریٹری تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ایس کے افضل الدین کے علاوہ دوسرے قائدین موجود تھے۔ آر سی کنٹیا نے کہا کہ مولانا آزاد نے جدوجہد آزادی میں گاندھی جی کے ساتھ کام کرکے 35 سال کی عمر میں آل انڈیا کانگریس کے صدر منتخب ہوئے۔ ہندوستان کی تقسیم کے موقع پر انہوں نے مسلمانوں کو پاکستان جانے سے روکا۔ مولانا آزاد ہندو مسلم اتحاد کے علمبردار تھے۔ انہوں نے ٹی آر ایس حکومت پر 12 فیصد مسلم تحفظات کے معاملے میں چیف منسٹر کے سی آر پر مسلمانوں کو دھوکہ دینے اور بی جے پی سے میچ فکسنگ کرتے ہوئے مسلمانوں سے کئے گئے وعدے کو نظرانداز کرنے کا الزام عائد کیا۔ اتم کمار ریڈی نے مولانا ابوالکلام آزاد کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ وہ ایک سیکولر قائد تھے۔ جدوجہد آزادی میں کئی مرتبہ جیل گئے۔ کانگریس پارٹی کومستحکم بنانے میں اہم رول ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر 12 فیصد مسلم تحفظات کے موقف کا مسلمانوں سے وضاحت کرنے کے بجائے مقامی جماعت کو خوش کررہے ہیں۔ کانگریس کی جانب سے اسمبلی میں وقفہ سوالات اور دوسرے مباحث میں مسلم تحفظات کے موقف کا دوسرے عوامی مسائل جب اٹھانے کی کوشش کی جارہی ہے تو حکمراں ٹی آر ایس اس کی اجازت نہیں دے رہی ہے۔ اقلیتی امور پر دھوکہ دیا جارہا ہے۔ اعلانات تو بہت کئے جارہے ہیں مگر کوئی عمل آوری نہیں ہورہی ہے۔ کانگریس پارٹی نے آج 12 فیصد مسلم تحفظات کیلئے چارمینار تا گاندھی بھون تک بہت بڑی کامیاب ریالی منظم کی ہے، جس سے حکومت کی نیندیں حرام ہوجائیں گی۔ انہوں نے کانگریس کے کارکنوں کو 12 فیصد مسلم تحفظات کے معاملے میں عوام میں شعور بیدار کرتے ہوئے جدوجہد کے ذریعہ حکومت پر دباؤ بنانے کا مشورہ دیا۔ محمد خواجہ فخرالدین نے صدارتی تقریر کرتے ہوئے مولانا آزاد کی خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے انہیں بھرپور خراج عقیدت پیش کیا اور نوجوان نسل کو مولانا آزاد کے خوابوں کی تکمیل کیلئے کمربستہ ہوجانے پر زور دیا اور مقامی جماعت پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے 12 فیصد مسلم تحفظات کے معاملے میں حکومت پر کوئی دباؤ نہیں بنایا۔ صرف جی حضوری میں مصروف ہے۔ کانگریس پارٹی نے اسمبلی اور کونسل میں پیش کئے گئے 12 فیصد مسلم تحفظات کی بھرپور تائید کی ہے مگر کے سی آر کی نیت پر کانگریس کو شک ہے۔ 4 ماہ کا وعدہ 40 ماہ بعد بھی پورا نہیں ہوا ہے۔ اقلیتوں کیلئے ہر سال جتنا بجٹ مختص کیا جارہا ہے اس میں 40 فیصد بھی خرچ نہیں کیا جارہا ہے۔ اس موقع پر مختلف تحریری و تقریری مقابلوں میں بہترین مظاہرہ کرنے والے طلبہ وغیرہ میں انعامات تقسیم کئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT