Tuesday , November 13 2018
Home / Top Stories / قذافی کا بیٹا سعدی نائیجیریا سے لیبیا کے حوالے

قذافی کا بیٹا سعدی نائیجیریا سے لیبیا کے حوالے

طرابلس ، 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) حکومت لیبیا نے اعلان کیا ہے کہ نائیجیریا نے مقتول آمر معمر قذافی کے تیسرے بیٹے السعدی قذافی کو لیبیائی حکام کے حوالے کر دیا ہے۔ وزیراعظم علی زیدان کے دفتر سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ سعدی قذافی جمعرات کو لیبیا پہنچا اور اب وہ طرابلس کی جیل میں ہے۔ لیبیا کے حکام نے اس اقدام پر نائیجیریائی حکومت کا اس معاملے میں تعاون کرنے پر شکریہ ادا کیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ ملزمان کے ساتھ بین الاقوامی معیار کے مطابق سلوک کیا جائے گا۔ حکومت کی طرف سے جاری کردہ تصویر میں دکھایا گیا ہے کہ سعدی قذافی نے نیلا ٹریک سوٹ پہن رکھا ہے اور اس کے بال کاٹے جا رہے ہیں۔ قذافی کے اس بیٹے پر الزام ہے کہ وہ کرپشن میں ملوث ہے اور اس نے غیر قانونی طور پر زمینوں پر قبضے کئے ہیں۔ 40 سالہ سعدی 2011ء میں اپنے والد کے اقتدار کے خاتمے پر پڑوسی ملک نائیجیریا بھاگ گیا تھا۔ اس پر اقوام متحدہ کی طرف سے سفر کرنے پر پابندی ہے۔ سعدی قذافی کو اس کو ’پلے بوائے‘ امیج کے حوالے سے جانا جاتا ہے۔ سعدی لیبیا کے سابق صدر کے آٹھ بچوں میں سے ہے جو کہ حکومت کو مطلوب ہیں۔ سعدی کا بھائی سیف الاسلام پہلے ہی ملک میں قید ہے، اُسے ملیشیا گروپوں نے پکڑنے کے بعد حکومت کے حوالے کیا تھا۔ سیف الاسلام قذافی انسانیت کے خلاف مبینہ جرائم پر بین الاقوامی جرائم کی عدالت میں بھی مطلوب ہیں۔ قذافی خاندان کے دیگر افراد عمان میں جلاوطنی کاٹ رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT