Tuesday , December 11 2018

قذافی کے بیٹوں اور 39 دیگر کیخلاف مقدمہ شروع

طرابلس، 15 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) لیبیا میں سابق حکمران معمر قذافی کے دو بیٹوں سیف الاسلام اور سعدی سمیت سابق دور کی 39 اہم شخصیات کیخلاف سماعت کی شروعات ہو گئی ہے، تاہم عدالت نے سماعت کے آغاز کے ساتھ ہی کارروائی یہ کہہ کر ملتوی کر دی کہ اس مقدمے میں ضروری تحقیقات مکمل نہیں کی گئی ہیں۔ واضح رہے کہ قذافی کے بیٹوں سیف اور سعدی کو 2011 میں تحریک مزاحمت کے دوران گرفتار کیا گیا تھا۔ ان کے خلاف مقدمے کی سماعت شروع ہوئی تو یہ دونوں عدالت میں پیش نہ کئے گئے تھے ۔ البتہ قذافی دور کے انٹیلی جنس چیف عبداللہ السینوسی دیگر سابق حکام کے ساتھ سماعت کے موقع پر موجود تھے۔ تمام ملزمان نیلے رنگ کے مخصوص لباس میں ایک آہنی پنجرے میں بند تھے۔ ان تمام ملزمان کو مبینہ کرپشن، جنگی جرائم سے متعلق الزامات کا سامنا ہے۔ معمر قذافی کو کئی ماہ کی روپوشی کے بعد باغیوں نے ہلاک کر دیا تھا۔ مقدمات میں ملوث ان سابق حکام میں سے کئی کو سزائے موت بھی مل سکتی ہے۔ لیبیا جو تیل کی پیداوار کے حوالے سے اہم ملک ہے قانون کی عملداری کیلئے کوشاں ہے کہ 2011 کے بعد سے ملک میں بندوق بردار حاوی نظر آتے ہیں۔سعدی قذافی کو ایک پلے بوائے کے طور پر جانا جاتا ہے۔ سعدی کچھ عرصہ فٹبال بھی کھیلتا رہا جسے نائجر میں گرفتاری کے بعد لیبیا کے حکام کے حوالے کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT