Friday , June 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / قرآن مجید سارے عالم کے انسانوں کیلئے سرچشمہ ہدایت

قرآن مجید سارے عالم کے انسانوں کیلئے سرچشمہ ہدایت

کریم نگر۔/20جون، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ماہ رمضان ایک مقدس ماہ ہے، اسی ماہ میں قرآن مجید نازل کیا گیا۔ قرآن مجید صرف مسلمانوں کے لئے نہیں ہے یہ سارے جہاں کے انسانوں کے لئے راہ ہدایت پانے کیلئے ہے۔ یہ صرف مسلمانوں کیلئے ہے ، کہیں بھی نہیں لکھا گیا ہے۔ اسی طرح گیتا ہو کہ انجیل یہ کسی خاص مذہب کے ماننے والوں کے لئے ہے ، کہیں نہیں لکھا ہے۔ یہ

کریم نگر۔/20جون، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ماہ رمضان ایک مقدس ماہ ہے، اسی ماہ میں قرآن مجید نازل کیا گیا۔ قرآن مجید صرف مسلمانوں کے لئے نہیں ہے یہ سارے جہاں کے انسانوں کے لئے راہ ہدایت پانے کیلئے ہے۔ یہ صرف مسلمانوں کیلئے ہے ، کہیں بھی نہیں لکھا گیا ہے۔ اسی طرح گیتا ہو کہ انجیل یہ کسی خاص مذہب کے ماننے والوں کے لئے ہے ، کہیں نہیں لکھا ہے۔ یہ اور بات ہے کہ اسے مختلف مذاہب نے اسے اپنی مقدس کتاب بنالیا ہے اور حسب منشاء اس میں ترمیم بھی کرلی ہے۔ لیکن قرآن ہی ایک ایسی کتاب ہے جس میں تاقیامت ایک زیر و زبر پیش کی تبدیلی ممکن نہیں ہے۔ جناب خیر الدین صدر جماعت اسلامی ہند شاخ کریم نگر نے ان خیالات کا اظہار کیا۔ وہ دفتر جماعت اسلامی میں عوامی برادری کے لئے افطار پارٹی سے خطاب کررہے تھے۔ اس موقع پر مختلف اخبارات اور الکٹرانک نیوز چینلس کے غیر مسلم صحافیوں کی کافی تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر انہوں نے روزہ کی اہمیت، فیوض و برکات پر بزبان تلگو تفصیل سے روشنی ڈالی۔ روزہ کے ذریعہ اخلاقی، روحانی اور سماجی تربیت کس طرح ہوگی واقف کروایا۔ انہوں نے غیر مسلم صحافیوں کے علم میں لاتے ہوئے انہیں اپنے اخبارات میں اسے شائع کرنے کی خواہش کی۔ روزہ بھوکے پیاسے رہنے کو نہیں کہا جاتا بلکہ تمام برائیوں سے بچے رہنے، جھوٹ، غیبت، دھوکہ دہی، بے شرمی، بے حیائی سے باز رہنے، محض اللہ کی خوشنودی اور اس کے حکم کی پابندی کا نام روزہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ حالت روزہ میں بعض جائز حلال بھی حرام ہوجاتے ہیں۔ یعنی صبح صادق سے غروب آفتاب تک اپنے آپ کو کھانے پینے، جماع سے دور رہنے کا نام روزہ ہے۔ روزہ دوسروں کی بھوک پیاس، غریبوں کا احساس دلاتا ہے۔ خدا ترسی، رحمدلی میں اضافہ کرتا ہے۔ فحش کلامی، غیبت، تمام برے کام اسلام میں ناجائز ہیں اور روزہ کی حالت میں ان تمام برے کاموں سے بچنے کی سخت تاکید کی جاتی ہے ورنہ صرف بھوک پیاس مشقت سے کچھ حاصل نہیںہوگا اور روزہ قبول نہیں ہوگا۔ جناب خیر الدین اور جناب عبدالحئی شعیب لطیفی نے پڑوسی کے حقوق، چاہے پڑوسی کسی بھی مذہب کا ہو اس کے ساتھ کس طرح کا یک مسلمان کا سلوک ہونا چاہیئے اس پر روشنی ڈالی۔ اس کے علاوہ جماعت اسلامی ہند کے فلاحی پروگرام، غیر سودی قرض، دیگر انسانی بھلائی کے کاموں کی تفصیلات پیش کیں۔ ہر ماہ 60بیواؤں کو دیئے جارہے وظیفہ جات سے واقف کروایا گیا۔ غیر مسلم صحافیوں میں تلگو ترجمہ قرآن مجید کا تحفہ دیا گیا۔ نمائندہ سیاست کو بھی ترجمہ قرآن کا تحفہ دیا۔ اس موقع پر گیٹورائی ہفتہ وار رمضان نمبر کی رسم اجرائی کے بعد تقسیم عمل میں لائی گئی۔ عبدالواحد نے جلسہ کی کارروائی چلائی۔ بعد ازاں رمضان کی خصوصی ڈش حلیم پیش کی گئی۔

TOPPOPULARRECENT