Monday , December 11 2017
Home / Top Stories / قرآن مجید کے آفاقی پیام کو بندگان خدا تک پہونچانے کی مساعی

قرآن مجید کے آفاقی پیام کو بندگان خدا تک پہونچانے کی مساعی

ع10علاقائی زبانوں میں ترجمہ پر مشتمل ویب سائٹ کا افتتاح ، مختلف تفاسیر و تراجم کے مطالعہ کی سہولت اور15 خوش الحان قراء کرام کی قرأت

جناب زاہد علی خاں ، نواب شاہعالم خاں ،مفتی عظیم الدین، مولانا اکبرنظام الدین ، مولانا حمیدالدین شرفی ، مفتی صادق محی الدین ، ڈاکٹر شاہد علی خاں
جناب ظہیرالدین علی خاں ، جناب عامر علی خاں ، انقلابی شاعر غدر ، ایم وید کمار اور دیگر کی شرکت ، ادارۂ سیاست کی کاوشیں قابل قدر

حیدرآباد۔16جون (سیاست نیوز) اللہ رب العزت ادارۂ سیاست کی خدمات کو قبول فرمائے ۔ ادارۂ سیاست جمہوری اقدار کو برقرار رکھتے ہوئے ملت اسلامیہ کی فلاح و بہبود اوررفاہی خدمات میں مصروف ہے۔ مفتی اعظم جامعہ نظامیہ حضرت العلامہ مولانا مفتی عظیم الدین نے ادارۂ سیاست کی جانب سے JILTکے تعاون سے تیار کردہ ہندستانی علاقائی زبانوں میں قرآنی ترجمہ پر مشتمل  ویب www.quranhub.net کی افتتاحی تقریب سے خطاب کے دوران یہ دعاء کرتے ہوئے کہا کہ اللہ ادارۂ سیاست کے بانی ‘ ذمہ داران اور وابستگان کو ان خدمات کا بہتر اجر عطا کرے۔اس ویب سائٹ میں 10 علاقائی زبانوں کے تراجم کے علاوہ 15 خوش الحان قراء کرام کی قرأت اور تفاسیر کے مطالعہ کی سہولت موجود ہے۔ جناب زاہد علی خان ایڈیٹر سیاست کی زیر صدارت منعقدہ اس نورانی محفل میں بحیثیت مہمان خصوصی نواب شاہ عالم خان ‘ مولانا سید شاہ علی اکبر نظام الدین حسینی صابری سجادہ نشین بارگاہ حضرت شاہ خاموش  ؒ ‘ ڈاکٹر مولانا سید محمد حمید الدین شرفی ڈائریکٹر آئی ہرک‘مفتی صادق محی الدین فہیم‘ پروفیسر مصطفی شریف ‘ پروفیسر ڈاکٹر مولانا سید جہانگیر ‘جناب ظہیر الدین علی خان مینیجنگ ایڈیٹر سیاست‘ جناب عامر علی خان نیوز ایڈیٹر سیاست‘ حجۃ الاسلام مولانا میر محمد علی موجود تھے۔ اس تقریب میں ڈاکٹر شاہد علی خان‘ ڈاکٹر سراج الرحمن نقشبندی ‘ مسٹر ایم ویدکمار ‘ مسٹر بالادیر غدر ‘ جناب عبدالمتکبر ارشد‘ ڈاکٹر فخرالدین محمد ڈائریکٹر میسکو،جسٹس ای اسمٰعیل کے علاوہ دیگر اہم شخصیات موجود تھیں۔ مولانا مفتی عظیم الدین نے اس تقریب کے دوران ہندی ترجمہ کے پیج کا افتتاح انجام دیا۔ جناب زاہد علی خان نے صدارتی خطاب کے دوران اعلان کیا کہ قرآن کی خدمت کو وہ اپنے اسلاف کی مغفرت کا باعث تصور کرتے ہوئے اس سلسلہ کو مزید وسعت دیں گے اور بین الاقوامی زبانوں بالخصوص چینی و روسی زبانوں میں ترجمہ آن لائن پیش کرنے کی کوشش کی جائے گی خواہ اس کے لئے جتنے اخراجات برداشت کرنے پڑیں اس کام کو مکمل کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ ہندستانی علاقائی زبانوں میں قرآن کے ترجمہ کو آن لائن پیش کرنے کا منصوبہ جناب ظہیر الدین علی خان نے پیش کیا تھا ۔ جناب زاہد علی خان نے بتایا کہ اخبار سیاست کی ویب سائٹ کا دنیا بھر کے 107ممالک اور 3500شہروں میں مشاہدہ کیا جاتا ہے ان حالات میں اس بات کا اندازہ لگانا دشوار نہیں ہے کہ عصری ٹکنالوجی سے عوام کس رفتار کے ساتھ ہم آہنگ ہو رہے ہیں۔ ایڈیٹر سیاست نے بتایا کہ قرآن کا آفاقی پیغام صرف مسلمانوں کیلئے نہیں ہے بلکہ کتاب اللہ ہر انسان کیلئے سر چشمۂ ہدایت ہے۔ جناب زاہد علی خان نے کہا کہ ملک کے دیگر طبقات تک قرآن کے ترجمہ کو پہنچانے کیلئے ادارۂ سیاست نے یہ بیڑہ اٹھایا ہے اور اللہ سے امید ہے کہ سیاست کے ہر کام کی طرح اللہ تعالی اس کام کو بھی مقبول عام فرمائیں گے۔ نواب شاہ عالم خان نے اس موقع پر اپنے خطاب کے دوران کہا کہ موجودہ دور میں مسلمانوں کو مشتبہ بناتے ہوئے دین اسلام کو نشانہ بنانے کی کوششیں کی جا رہی ہیں ایسے حالات میں ادارۂ سیاست کا یہ اقدام لائق ستائش ہے۔ انہوں نے نزول قرآن کے مہینہ میں قرآن کے علاقائی زبانوں پر مشتمل ترجموں کی ویب سائٹ کے افتتاح کو قابل مبارکباد قرار دیتے ہوئے کہا کہ اللہ کے رسولﷺ کی حدیث کے مفہوم کے مطابق  ’’ تم میں بہترین شخص وہ ہے جو قرآن سیکھے اور سکھائے ‘‘ نواب شاہ عالم خان نے کہا کہ قرآن کے دستور حیات سے بہتر کوئی قانون نہیں ہے۔ اسی طرح قرآن مجید تسکین قلب کا بہترین ذریعہ ہے۔ نواب شاہ عالم خان نے قرآن کے آفاقی پیام کو عام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ مولانا سید شاہ علی اکبر نظام الدین حسینی صابری امیر جامعہ‘ جامعہ نظامیہ نے ادارۂ سیاست کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’سیاست ‘ کی خدمات اظہر من الشمس ہیں جس سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے ادارۂ سیاست کی جانب سے طبع شدہ دیگر تراجم کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ خدمات عرصہ دراز سے جاری ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ قرآن کی خدمت کا بہترین کام حیدرآباد سے انجام دیا جاتا رہا ہے اور یہ سیاست کی بہترین خدمت و کوشش ہے۔ انہوں نے سر پکتھال کے انگریزی ترجمہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کا یہ ترجمہ آج بھی قرآن کے بہترین و معتبر انگریزی ترجموں میں شمار کیا جاتا ہے اسی طرح فرزندنظامیہ ڈاکٹر حمیداللہ جو کہ فرانس منتقل ہو گئے تھے نے جو فرانسیسی ترجمہ کیا ہے آج بھی وہی ترجمہ موجود ہے۔ پروفیسر مصطفی شریف نے اس موقع پر اپنے خطاب میں کہا کہ قرآنی تراجم کے ساتھ تفاسیر کا مطالعہ بھی ضروری ہے اسی لئے یہ ضروری ہے کہ قرآن مجید کو سمجھ کر پڑھنے کیلئے تفاسیر کا مطالعہ بھی کیا جائے۔ انہوں نے اس ویب سائٹ کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ غیر مسلم تیزی کے ساتھ قرآن کی سمت راغب ہو رہے ہیں انہیں ان کی اپنی زبان میں قرآن کا ترجمہ فائدہ پہنچا سکتے ہیں۔ پروفیسر ڈاکٹر سید جہانگیر نے اس تقریب سے خطاب کے دوران کہا کہ ہمیں قرآن سے قربت اختیار کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ اللہ تعالی نے قرآن مجید صرف مسلمانوں کو مخاطب نہیں کیا ہے بلکہ قرآن نے متعدد مقامات پر ’’اے لوگو‘‘ سے مخاطب کیا ہے۔ ڈاکٹر سید جہانگیر نے بتایا کہ قرآن مجید میں انسانیت کی بھلائی و خیر موجود ہے۔ جناب ظہیر الدین علی خان نے اپنے خطاب کے دوران کہا کہ 1996میں انٹرنیٹ کے آغاز کے ساتھ ہی انہیں اشاعت دین کے بہترین ذریعہ کا احساس پیدا ہوا تھا اور عصری ٹکنالوجی کے استعمال کے ذریعہ دعوت و تبلیغ کے کام پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے خدمات کا آغاز کیا گیا اور گزشتہ چند برسوں کے دوران تجوید القرآن کے 10لاکھ سے زائد سی ڈیز تقسیم کئے جا چکے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ انگریزی و اردو زبان میں قرآن ایکسپلورر ویب سائٹ کو دیکھنے کے بعد اسی طرز پر علاقائی زبانوں میں قرآنی تراجم کو پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا اس کام میں JILT کے ذمہ داران با لخصوص جناب ابوالخیر صدیقی اور جناب ابو مظہر خالد صدیقی نے کافی محنت کی۔ جناب ظہیر الدین علی خان نے بتایا کہ انہوں نے ایک حدیث کو پیش نظر رکھتے ہوئے یہ کام شروع کروایاتھا جس کی تکمیل کیلئے ایک سال کا عرصہ درکار ہوا۔ مفہوم حدیث کا ذکر کرتے ہوئے مینیجنگ ایڈیٹر سیاست نے کہا کہ’’ اللہ کے رسولﷺ کا ارشاد گرامی ہے کہ مجھے ہند سے جنت کی خوشبو آتی ہے‘‘۔ اور آج کے حالات کا مشاہدہ کیا جائے تو دنیا میں اگر 160کروڑ کی مسلم آبادی ہے تو اس میں 80کروڑ مسلمان اس وقت کے غیر منقسم ہندستان میں پائے جاتے ہیں جس میں افغانستان ‘ پاکستان ‘ انڈونیشیاء و ملیشیاء شامل ہیں۔ جناب ابواخیر صدیقی نے بتایا کہ گزشتہ برس اس پراجکٹ کا آغاز کیا گیا تھا اور اس پراجکٹ پر کافی محنت و مشقت کے ساتھ بہترین وسائل کا استعمال کرتے ہوئے اسے تیار کیا گیا ہے۔ جناب ابو مظہرخالد صدیقی نے ویب سائٹ کی مکمل تفصیلات و تیاری کے دوران نشیب و فراز سے واقف کرواتے ہوئے کہا کہ یہ ویب سائٹ نہ صرف ترجمہ پڑھنے والوں کیلئے بلکہ تقابلی مطالعہ کرنے والوں کیلئے بھی انتہائی کار آمد ثابت ہوگی۔ جناب طارق منیر نے بھی اس تقریب سے مخاطب کیا۔مولانا حافظ و قاری محمد نصیر الدین منشاوی کی قرأت کلام پاک سے اس روحانی تقریب کا آغاز ہوا۔ ڈاکٹر محمد جنید ذاکر نے اس تقریب کے دوران نظامت کے فرائض انجام دیئے۔

TOPPOPULARRECENT