Tuesday , December 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / قرض فراہمی میں لاپرواہی اور بے قاعدگی کے خلاف انتباہ

قرض فراہمی میں لاپرواہی اور بے قاعدگی کے خلاف انتباہ

نظام آباد:7 ؍ اپریل (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )قرضہ جات کی فراہمی میں دلچسپی دکھاتے ہوئے حکومت کی ترقیاتی اسکیمات کی عمل آوری میں ضامن بنیں۔ ان خیالات کا اظہار ضلع جوائنٹ کلکٹر اے رویندرریڈی کل پرگتی بھون میں ضلع سطح کے بینک عہدیداروں کے ساتھ منعقدہ اجلاس سے مخاطب کرتے ہوئے کیا۔ سال 2016-17 کیلئے 6030 کروڑ روپئے کے سالانہ قرضہ جات کی فراہمی کی منصوبہ بندی کی گئی۔ ضلع جوائنٹ کلکٹر رویندرریڈی نے کہا کہ گذشتہ سال سے بھی اس سال قرضہ جات کی فراہمی کیلئے 16.59 فیصد زیادہ منصوبہ بندی کی گئی ۔ سال 2016-17میں کراپ لون 3250 کروڑ روپئے فراہم کیا جائیگا۔ یہاںپر کئے گئے فیصلہ کے مطابق قرضہ جات کی فراہمی کریں۔ دشواریاں پیش آنے کی صورت میں عہدیداروں کو اطلاع دیں۔ عملہ کی کمی، ٹکنیکی مشکلات کے نام پر عوام کو ہراساں نہ کرے اور دشواریاں پیش آنے نہ دے۔ قرضہ جات کی ریکوری اور دھاندلیاں کرنے والوںکے خلاف کارروائی کرنے پر زوریا۔ ضلع انتظامیہ بینکرس کا ہر طرح سے ساتھ دینے کی ضرورت ہے۔ سلف ہلپ، زرعی یونٹس کی ترقی کیلئے حکومت کی جانب سے بڑے پیمانے پر سبسیڈی فراہم کی جارہی ہے۔ ان اسکیمات میں بینک کی جانب سے کم فیصد قرض دینا ہوتا ہے۔ نشانہ کے مطابق یونٹ کی منظوری عمل میں لائے۔ وزیر آعظم فصل جیوتی انشورنس اسکیم، وزیر اعظم سرکشا بیمہ یوجنا، اٹل پیشن یوجنا، کسانوں کو قرضہ جات کی معافی کی عمل آوری میں بینکروں کا تعاون ناگزیر ہے۔ غریب خاندانوں کی امداد کیلئے انشورنس کی اسکیمات کی عمل آوری کیلئے بڑے پیمانے تشہیر، ضلع پریشد، منڈل پریشد کے اجلاسوں میں شرکت کریں اور اس اسکیمات سے متعلق بینکرس اطلاع دیں۔ اس موقع پر ضلع پریشد چیرمین دفعدار راجو نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ دیہی علاقوں میں غریب خاندانوں کو قرضہ جات کی فراہمی میں بینک عہدیدار غیر ذمہ دارانہ رویہ اختیارکررہے ہیں۔ ایس سی، ایس ٹی، بی سی کے کارپوریشنوں کے ذریعہ حکومت کی جانب سے مقررہ کردہ نشانہ کی تکمیل کیلئے یونٹس کی منظوری، سویا بین فصل کیلئے قرض میں اضافہ ، زیادہ تر کسانوںکو وقت مقررہ پر قرضہ جات منظور کرنے کی رکن اسمبلی جکل ہنمنت شنڈے نے مطالبہ کیا۔ اس موقع پر اسٹیٹ بینک منیجر راماکرشنا رائونے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری اسکیمات کی قرضہ جات کی منظوری میں لاپرواہی برتنے والے کوٹیک مہیندرا خانگی بینک کیخلاف کارروائی کرنے کیلئے ریزرو بینک سے خواہش کی گئی۔ اس موقع پر قانون ساز کونسل کے اراکین راجیشور رائو، جوائنٹ کلکٹر راجہ رام و دیگر عہدیدار بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT