Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / قرض معافی اسکینڈل:100 کسانوں کاایک ہی آدھار نمبر

قرض معافی اسکینڈل:100 کسانوں کاایک ہی آدھار نمبر

ممبئی۔ 25 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت مہاراشٹرا کی قرض معافی اسکیم پر عمل آوری کیلئے آن لائن رجسٹریشن کی کوشش نے حکام کو ایک مخمصے میں ڈال دیا ہے کیونکہ زائد از 100 کسانوں کے نام واحد آدھار نمبر سے مربوط پائے گئے ہیں۔ ریاستی حکومت نے قبل ازیں زور دیا تھا کہ کسان اپنے آدھار کے ساتھ آن لائن رجسٹریشن کرائیں جو شناخت کا منفرد نمبر ہے۔ حکومت نے کہا ہے کہ اس طرح آدھار کی اساس پر قرض معافی اسکیم کو جوڑنے سے نہ صرف سہولت ہوگی بلکہ اسکیم کا غلط استعمال روکا جاسکے گا، لیکن ایک ہی نمبر 100 سے زیادہ کسانوں کے نام پائے جانے پر کرپشن کے سدباب کا اصل مقصد فوت ہوتا معلوم ہورہا ہے۔ مہاراشٹرا کے محکمہ امداد باہمی کے ایک سینئر عہدیدار نے کسانوں کے امکانی استفادہ کنندگان کی فہرست دکھائی جن میں سب کا آدھار نمبر مشترک ہے، جو حکومت کیلئے بڑی تشویش کا معاملہ بن گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ہم نے ہمیشہ یہی سوچا کہ آدھار نمبر سے ہم فرضی استفادہ کنندگان کا پتہ چلانے میں کامیاب رہیں گے۔ اب یہ نئی مشکل آن پڑی ہے کہ اس چیلنج سے کس طرح نمٹا جائے کہ اس قدر بڑی تعداد میں کسانوں کا یکساں آدھار نمبر ہے۔ اگر ہمیں فرداً فرداً جانچ کرنا پڑے تو اس کے لئے کئی ہفتے درکار ہوں گے۔ کاشت کار کمیونٹی پہلے ہی قرض معافی اسکیم پر عمل آوری میں تاخیر پر مشتعل ہے۔ چیف منسٹر دیویندر فرنویس نے اس طرح کے مسائل سے نمٹنے کیلئے بینکروں کے ساتھ ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT