Thursday , September 20 2018
Home / شہر کی خبریں / قرعہ اندازی کے ذریعہ 3904 عازمین حج کا انتخاب

قرعہ اندازی کے ذریعہ 3904 عازمین حج کا انتخاب

ریاست کے حج کوٹہ میں جاریہ سال کافی تخفیف،کئی عازمین کو مایوسی

ریاست کے حج کوٹہ میں جاریہ سال کافی تخفیف،کئی عازمین کو مایوسی

حیدرآباد۔/17اپریل، ( سیاست نیوز) حج 2014ء کیلئے آندھرا پردیش حج کمیٹی کے عازمین حج کی قرعہ اندازی آج انجام دی گئی۔ جاریہ سال سنٹرل حج کمیٹی نے آندھرا پردیش کیلئے جملہ کوٹہ 5380 مقرر کیا ہے۔ ان میں محفوظ زمروں کے تحت 1476 عازمین کا قرعہ اندازی کے بغیر انتخاب کرلیا گیا۔ حج کمیٹی کو موصولہ 16,607 درخواستوں میں سے 3904 عازمین کا قرعہ اندازی کے ذریعہ انتخاب عمل میں آیا۔ اس طرح آندھرا پردیش کیلئے جاریہ سال حج کوٹہ میں کافی تخفیف ہوئی ہے جبکہ درخواستوں کی تعداد گزشتہ سال کے مقابلہ اس سال زیادہ رہی۔ چونکہ سب سے زیادہ درخواستیں حیدرآباد سے وصول ہوئیں لہذا حیدرآباد کے درخواستوں گزاروں کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑا۔ حج ہاوز میں آج قرعہ اندازی کی تقریب منعقد ہوئی۔ سنٹرل حج کمیٹی کی راست نگرانی میں ممبئی میں آن لائن قرعہ اندازی کی گئی جبکہ حیدرآباد میں قرعہ اندازی کا بٹن دبایا گیا۔ اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے بٹن دباکر قرعہ اندازی کا آغاز کیا۔ مسلم آبادی کے لحاظ سے ہر ضلع کو کوٹہ مقرر کیا گیا تھا۔

تقریب میں اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور، کمشنر اقلیتی بہبود شیخ محمد اقبال ( آئی پی ایس) اور ایکزیکیٹو آفیسر حج کمیٹی محمد عبدالحمید نے شرکت کی۔ گزشتہ سال حج 2013ء کیلئے جملہ 16,982 درخواستیں وصول ہوئی تھیں جبکہ آندھرا پردیش کیلئے 7,322 عازمین کا کوٹہ مقرر کیا گیا تھا۔ 1345 عازمین کا محفوظ زمرے میں قرعہ اندازی کے بغیر انتخاب کیا گیا تھا جبکہ 5977کیلئے قرعہ اندازی انجام دی گئی تھی۔ اسی طرح جاریہ سال جملہ 18083 درخواستیں وصول ہوئیں جبکہ ریاست کا کوٹہ 5380 مقرر کیا گیا۔ حیدرآباد سے سب سے زیادہ 9738 درخواستیں وصول ہوئیں اور حیدرآباد کیلئے 1787 عازمین کا کوٹہ مقرر کیا گیا۔ ضلع عادل آباد کی قرعہ اندازی سب سے پہلے انجام دی گئی۔ اس ضلع کیلئے157عازمین کا کوٹہ مقرر کیا گیا جس میں 24کا انتخاب محفوظ زمرے کے تحت کیا گیا۔ اننت پور کیلئے 246، چتور 205، کڑپہ 237، مشرقی گوداوری 47، گنٹور 288، کریم نگر 145، کھمم 91، کرشنا169، کرنول 377، محبوب نگر 237، میدک 237، نلگنڈہ 129، نیلور 132، نظام آباد 281، پرکاشم 102، رنگاریڈی 288، سریکاکلم 4، وشاکھاپٹنم 42، وجیا نگرم 9، ورنگل 120 اور مغربی گوداوری کیلئے 50کا کوٹہ مقرر کیا گیا۔آن لائن قرعہ اندازی کے موقع پر شہر اور اضلاع سے تعلق رکھنے والے عازمین کی کثیر تعداد موجود تھی۔حج کمیٹی کی جانب سے مرد و خواتین کیلئے علحدہ انتظامات کئے گئے اور کور نمبر دیکھنے کیلئے بڑے اسکرین لگائے گئے تھے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اسپیشل سکریٹری عمر جلیل نے کہا کہ جن عازمین کا قرعہ اندازی میں انتخاب ہوا ہے وہ یقیناً خوش قسمت ہیں کیونکہ اللہ تعالیٰ کے بلاوے کے بغیر کوئی بھی شخص حج کی سعادت کیلئے نہیں جاسکتا۔

انہوں نے ایسے افراد جن کا قرعہ اندازی میں انتخاب نہیں ہوسکا مشورہ دیا کہ وہ مایوس نہ ہوں بلکہ اللہ کے گھر حاضری کیلئے دعاؤں کا سلسلہ جاری رکھیں ممکن ہے کہ اللہ تعالیٰ آئندہ برسوں میں ان کی دعاء قبول کرلے گا۔ کمشنر اقلیتی بہبود شیخ محمد اقبال نے کہا کہ جو افراد حج کی سعادت حاصل کرنے سے محروم ہیں انہیں چاہیئے کہ وہ غریب لڑکیوں کی شادی یا غریب طلبہ کی تعلیم پر رقم خرچ کریں ہوسکتاہے کہ اللہ تعالیٰ اس کا اجر حج کے برابر عطا کردے۔ انہوں نے عوام کو مشورہ دیا کہ وہ حج کو روانگی کے سلسلہ میں درمیانی افراد اور بروکرس کا شکار نہ ہوں۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی عہدیدار ایک بھی شخص کو قرعہ اندازی کے بغیر حج پر روانہ نہیں کرسکتا۔ قرعہ اندازی کا عمل انتہائی شفاف ہے جس میں بے قاعدگی کی کوئی گنجائش نہیں۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے حج کوٹہ اور قرعہ اندازی کے بارے میں تفصیلات بیان کی۔ انہوں نے کہا کہ اکثر یہ دیکھا گیا ہے کہ لوگ حج کو روانگی کیلئے درمیانی افراد کے دھوکہ کا شکار ہوجاتے ہیں، اس طرح کے افراد کے خلاف حج کمیٹی سخت کارروائی کرے گی۔ انہوں نے بتایاکہ حج کمیٹی کی جانب سے گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی حج کیمپ اور ایر پورٹ پر خصوصی انتظامات کئے جائیں گے۔ایکزیکیٹو آفیسر حج کمیٹی ایم اے حمید نے خیرمقدم کیا۔

TOPPOPULARRECENT