Sunday , June 24 2018
Home / شہر کی خبریں / قضات کے دفتر میں کرسمس کے ملبوسات رکھنے کی ہدایت پر تنازعہ

قضات کے دفتر میں کرسمس کے ملبوسات رکھنے کی ہدایت پر تنازعہ

محکمہ اقلیتی بہبود اور وقف بورڈ کے درمیان ٹکراؤ ، اے کے خاں کی کامیاب مصالحت
حیدرآباد۔ 11 ڈسمبر (سیاست نیوز) حج ہائوز کی عمارت کے استعمال کے مسئلہ پر آج اس وقت تنازعہ پیدا ہوگیا جب سکریٹری اقلیتی بہبود نے وقف بورڈ کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر کو قضات کا دفتر منتقل کرتے ہوئے کرسمس کے موقع پر عیسائیوں میں تقسیم کئے جانے والے کپڑے رکھنے جگہ فراہم کرنے کی ہدایت دی۔ اس مسئلہ پر بورڈ اور محکمہ کے درمیان تنازعہ پیدا ہوگیا اور سکریٹری اقلیتی بہبود نے وقف بورڈ کی شکایت چیف منسٹر سے کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے رپورٹ تیار کی۔ تاہم حکومت کے مشیر اے کے خان نے مداخلت کرتے ہوئے مصالحت کرادی اور سکریٹری اقلیتی بہبود کے شکایتی مکتوب کو روک دیا گیا۔ بتایا جاتا ہے کہ ا س مسئلہ پر سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل اور صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم کے درمیان نااتفاقی پیدا ہوئی۔ بتایا جاتا ہے کہ ہر سال کی طرح اس سال بھی حکومت کی جانب سے کرسمس کے موقع پر عیسائیوں میں کپڑے تقسیم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ کپڑوں کو ہر سال حج ہائوز میں محفوظ کیا جاتا ہے اور یہیں سے شہر اور اضلاع کے چرچس کے لیے کپڑے جاری کیے جاتے ہیں۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے حج ہائوز کے گرائونڈ فلور پر جگہ فراہم کرنے چیف ایگزیکٹیو آفیسر وقف بورڈ کو ہدایت دی۔ انہوں نے قضات کے دفتر کی موجودگی کے سبب سیلر میں کپڑے محفوظ کرنے کی تجویز پیش کی۔ سیلر میں کپڑوں کی حفاظت کا کوئی انتظام نہیں اور صفائی کا کوئی نظم نہیں ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے کپڑوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے قضات دفتر کو دوبارہ پرانے آفس میں منتقل کرتے ہوئے جگہ فراہم کرنے کی ہدایت دی۔ بتایا جاتا ہے کہ اس مسئلہ پر انہوں نے صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم سے فون پر بات چیت کی اور کہا کہ اگر وقف بورڈ جگہ کی فراہمی سے انکار کرتا ہے تو وہ چیف منسٹر کو رپورٹ کریں گے۔ دونوں کے درمیان تلخ گفتگو کے بعد سکریٹری اقلیتی بہبود نے چیف منسٹر کے نام مکتوب تیار کیا جس میں وقف بورڈ کی جانب سے حکومت کے کام کاج میں عدم تعاون کی شکایت کی گئی۔ حج درخواست گزاروں کے لیے جو کائونٹرس قائم کیے جاتے ہیں اس کے لیے بھی وقف بورڈ نے جگہ فراہم کرنے سے انکار کیا ہے۔ انہوں نے سیلر میں کپڑوں کے غیر محفوظ ہونے اور گندگی کا بھی تذکرہ کیا۔ چیف منسٹر کو رپورٹ کی روانگی سے عین قبل یہ معاملہ حکومت کے مشیر اے کے خان کے علم میں آیا۔ انہوں نے دونوں کو طلب کرتے ہوئے مصالحت کرادی اور چیف منسٹر کو مکتوب کی روانگی موخر کردی۔ صدرنشین وقف بورڈ نے حج ہائوز کے دوسرے حصے میں گرائونڈ فلور کا مکمل حصہ کپڑے محفوظ کرنے کے لیے فراہم کرنے سے اتفاق کرلیا ہے۔ حج کمیٹی اپنے کائونٹرس کو عمارت کے دوسرے حصہ میں منتقل کردے گی۔ سکریٹری اقلیتی بہبود کا کہنا ہے کہ وقف بورڈ کی کارکردگی محکمہ اقلیتی بہبود کے تحت آتی ہے اور چیف منسٹر کی اسکیمات پر عمل آوری میں عدم تعاون کا رویہ ٹھیک نہیں ہے۔ اس بارے میں جب سکریٹری اقلیتی بہبود سے استفسار کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ معاملہ سلجھ گیا ہے اور وقف بورڈ حکام نے مکمل تعاون کا پیشکش کیا۔

TOPPOPULARRECENT