Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / قطب شاہی مسجد عالمگیری کی وقف اراضی پر قبضے

قطب شاہی مسجد عالمگیری کی وقف اراضی پر قبضے

ناجائز قابضین کے خلاف کارروائی کے لیے وقف بورڈ کی پولیس میں شکایت
حیدرآباد۔/22ڈسمبر، ( سیاست نیوز) تلنگانہ وقف بورڈ نے قطب شاہی مسجد عالمگیری واقع بوڈ اوپل گھٹکیسر کی اوقافی اراضی پر ناجائز قابضین کے خلاف کارروائی کیلئے پولیس میں شکایت درج کی ہے۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ نے میڈی پلی پولیس اسٹیشن میں تحریری شکایت درج کراتے ہوئے سروے نمبر 150 کے تحت 18ایکر 32گنٹے اوقافی اراضی پر کی گئی غیر قانونی تعمیرات کو فوری روکنے اور قابضین کے خلاف کارروائی کی درخواست کی ہے۔ انہوں نے اس اراضی کے بارے میں وقف بورڈ کے سرویئر اور انسپکٹر آڈیٹر کی رپورٹ اور وقف ریکارڈ کی تفصیلات بھی روانہ کی۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ گزٹ نمبر 6-(A) مورخہ 9فبروری 1989 کے تحت قطب شاہی مسجد عالمگیری وقف اراضی ہے۔ سریش کمار نامی شخص اور دوسروں نے غیر قانونی تعمیرات کا آغاز کیا اور وہ وقف ایکٹ کی دفعہ 52-(A) کے تحت مستوجب سزاء ہیں۔ انہوں نے پولیس سے درخواست کی کہ خاطیوں کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے فوری کارروائی کی جائے اور ریونیو عہدیداروں کے ساتھ مشترکہ سروے کے موقع پر پولیس انتظامات کریں۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر نے گھٹکیسر منڈل کے رجسٹرار کو بھی ایک علحدہ مکتوب روانہ کیا ہے اس مکتوب کی نقل کلکٹر رنگاریڈی اور دیگر متعلقہ عہدیداروں کو بھی روانہ کی گئی ہے۔ اسی دوران ایڈیٹر’سیاست‘ جناب زاہد علی خاں نے سابق رکن پارلیمنٹ سید عزیز پاشاہ، دکن وقف پروٹیکشن سوسائٹی کے صدر عثمان بن محمد الہاجر، صدر تنظیم انصاف سید کلیم الدین، جنرل سکریٹری تلنگانہ پرجا فرنٹ ثناء اللہ خاں کو مسجد کے معائنہ کیلئے روانہ کیا۔ انہوں نے معائنہ کے بعد چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ سے شکایت کی کہ گزشتہ ایک ہفتہ کے دوران تعمیراتی کام مکمل کرلیا گیا ہے۔ انہوں نے وقف بورڈ سے غیر مجاز قابضین کے خلاف فوری کارروائی کا مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT