Tuesday , December 11 2018

قطر کے وعدہ کے باوجود بیرونی ورکرس کی اموات جاری

لندن۔ 24 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) نیپالی تارکین وطن جو 2022ء میں قطر میں منعقد شدنی فٹبال ورلڈ کپ انفراسٹرکچر کی تعمیر میں مصروف ہیں ، حیرت انگیز طور پر 2014ء میں ہر دو دن میں ایک تارک وطن کے فوت ہوجانے سے تشویش پیدا ہوگئی ہے جبکہ خلیجی ممالک نے یہ وعدہ کیا ہے کہ تارکین وطن کیلئے ملازمتوں کے مقام پر حالات میں بہتری پیدا کی جائے گی لیکن عملی طو

لندن۔ 24 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) نیپالی تارکین وطن جو 2022ء میں قطر میں منعقد شدنی فٹبال ورلڈ کپ انفراسٹرکچر کی تعمیر میں مصروف ہیں ، حیرت انگیز طور پر 2014ء میں ہر دو دن میں ایک تارک وطن کے فوت ہوجانے سے تشویش پیدا ہوگئی ہے جبکہ خلیجی ممالک نے یہ وعدہ کیا ہے کہ تارکین وطن کیلئے ملازمتوں کے مقام پر حالات میں بہتری پیدا کی جائے گی لیکن عملی طور پر ایسا کچھ بھی نہیں ہے۔ ان اموات میں ہندوستان، بنگلہ دیش اور سری لنکا کی تارکین وطن شامل نہیں ہیں۔ اخبار ’’گارجین‘‘ نے یہ رپورٹ دی ہے کہ اگر مندرجہ بالا تینوں ممالک سے تعلق رکھنے والے تارکین وطن کی اموات کو بھی شامل کرلیا جائے تو اس طرح موت کا اوسط ایک دن میں ایک موت سے کہیں زیادہ ہوگا۔ اس سلسلے میں اخبار نے نیپال کے فارن ایمپلائمنٹ پروموشن بورڈ کا بھی حوالہ دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ قطر میں اس کے 157 ورکرس جنوری تا وسط نومبر کے دوران فوت ہوگئے۔

TOPPOPULARRECENT