Monday , October 15 2018
Home / شہر کی خبریں / قومی سطح پر بی جے پی کے خلاف منفی اثر کو ختم کرنے کے سی آر کا استعمال

قومی سطح پر بی جے پی کے خلاف منفی اثر کو ختم کرنے کے سی آر کا استعمال

تیسرے محاذ کی تشکیل سے بی جے پی کو فائدہ ، کانگریس قائد ریونت ریڈی کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 5 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کے رکن اسمبلی ریونت ریڈی نے کے سی آر کو آر ایس ایس اور بی جے پی کی چھوڑی ہوئی تیر قرار دیتے ہوئے کہا کہ کے سی آر کے خاندان میں کے ٹی آر کو چیف منسٹر بنانے کے لیے جھگڑے شروع ہوگئے ہیں ۔ مودی کو بچانے اور گھریلو تنازعات سے باہر نکلنے کے لیے چیف منسٹر کے سی آر تیسرے محاذ کا ناٹک کررہے ہیں ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ریونت ریڈی نے کہا کہ سنٹرل انٹلی جنس کے سروے میں یہ انکشاف ہوگیا ہے کہ آئندہ لوک سبھا انتخابات میں جنوبی ہند سے کانگریس کو 100 سے زائد نشستوں پر کامیابی حاصل ہونے اور بی جے پی 30 تا 40 نشستوں تک محدود ہوجائے گی ۔ حال ہی میں چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے بی جے پی سے آر پار کی لڑائی لڑنے کا اعلان کردیا تھا جس کے بعد بی جے پی بوکھلاہٹ کا شکار ہوگئی ۔ آر ایس ایس کے ہیڈکوارٹر ناگپور میں طئے پائے معاہدے کے تحت جنوبی ہند میں بی جے پی کے داخلے کو یقینی بنانے اور قومی سطح پر بی جے پی کے خلاف جو لہر چل رہی ہے اس کو توڑنے کے لیے کے سی آر کو شطرنج کے پیادے کی طرح استعمال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ کے سی آر ، بی جے پی کو فائدہ پہونچانے کے لیے تیسرے محاذ کی بات کررہے ہیں ۔ ریونت ریڈی نے بتایا کہ انہیں باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ کے سی آر کی فیملی میں سنتوش کو رکن راجیہ سبھا بنانے کی مخالفت شروع ہوگئی ہے اور ناراض ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر اپنی بیوی بچوں کے ساتھ مائی ہوم منتقل ہوچکے ہیں ۔ کے سی آر کا خاندان بکھر رہا ہے اور ان پر کے ٹی آر کو چیف منسٹر بنانے کا دباؤ بڑھ رہا ہے ۔ ان سب کو دیکھتے ہوئے کے سی آر نے اپنے فرزند کو چیف منسٹر بنانے اور نریندر مودی کی ڈوبتی کشتی کو بچانے کے لیے ایک منظم سازش کے تحت تھرڈ فرنٹ تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے اور اس ساری سازش میں ناگپور ہیڈکوارٹر کا کافی اہم رول رہا ہے ۔ ریونت ریڈی نے کہا کہ چند دن قبل علاج کے بہانے کے سی آر نے دہلی میں قیام کیا اور مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی سے ملاقات کرتے ہوئے انہیں سی بی آئی کیس سے نجات دلانے کی اپیل کی ۔ جس پر انہوں نے تھرڈ فرنٹ تشکیل دیتے ہوئے بی جے پی کو فائدہ پہونچانے کی خواہش کی ہے ۔ جس سے اتفاق کرنے والے کے سی آر تھرڈ فرنٹ کا تماشہ کررہے ہیں ۔ مودی کے خلاف جو لہر چل رہی ہے اس کو بی جے پی کے حق میں کرنے کی تیار کردہ سازش پر کے سی آر عمل کررہے ہیں ۔ پون کلیان کے پروگرام کو ٹی نیوز نے لائیو کاسٹ کیا ہے اس سے خفیہ معاہدے پر عمل کرنے کا اندازہ ہوگیا ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT