Monday , November 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / قوم و ملت کی رہبری کیلئے جمعیتہ العلماء ہمیشہ سرگرم

قوم و ملت کی رہبری کیلئے جمعیتہ العلماء ہمیشہ سرگرم

نظام آباد :26؍ اکتوبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )جمعیۃ علماء ضلع نظام آباد کے زیر اہتمام ایک اہم خصوصی اجلاس بہ ضمن ایک سالہ کارکردگی وموجودہ سیاسی حالات کے تناظر میں منعقد ہوا جس میں تمام منڈلوں کے صدور واراکین نے شرکت کرتے ہوئے اپنے اپنے علاقے کے سیاسی حالات اور قوم و ملت کی فلاح و بہبودی کیلئے کئے گئے رفاہی کاموں کی تفصیلات پیش کی۔ علاوہ ازیں شہر نظام آباد و اطراف کے دینی ماحول کا بھی جائزہ لیاگیا۔ مولانا سید ولی اللہ قاسمی صدر جمعیۃ علماء ضلع نظام آباد نے مخاطب کرتے ہوئے جمعیۃ علماء قربانیوں اور اکابرین جمعیۃ کے اخلاص کے اہم اور قیمتی واقعات وحالات زندگی پر روشنی ڈالی اور فرمایاکہ جمعیۃ علماء ایک ایسی تنظیم ہے جو اکابرین کے اخلاص کی جیتی جاگتی تصویر ہے ہرموڑ پر اس جماعت نے قوم وملت کی رہبری کا فریضہ انجام دیتے ہوئے پوری جرأت و بے باکی کے ساتھ سیکولر جماعتوں کی تائید کرتی رہی۔مولانا حافظ پیر شبیر صاحب نے تمام منڈلوں بشمول شہر نظام آباد کے اراکین کی کارکردگی سے خوشی واطمینان کا اظہار کرتے ہوئے فرمایاکہ موجودہ سیاسی حالات سے اراکین جمعیۃ کو گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ حکومتیں آتی رہیں گی جاتی رہیں گی لیکن ہمیں جمعیت کے کاز اور کام کو بڑھانے کی فکر وجستجو کرنی چاہئے مرکز ہو کہ ریاست کسی بھی پارٹی کو اقتدار حاصل ہوہم حالات سے گھبرانے والے نہیں ہم تو اس قوم وملت کی فلاح و کامیابی اور رضائے الٰہی کو سامنے رکھ کر کام کرتے ہیں اور اس جذبہ سے سرشار ہمارے اکابرین نے اس جماعت کی بنیاد رکھی تھی اور آج بھی یہ اس پر قائم ودائم ہیں۔ اس موقع پر عبدالقیوم شاکر القاسمی جنرل سکریٹری، محمد نصیر الدین ، محمد افضل الدین، عنایت علی اور محمد وسیم احمدخان، مولانا سید سمیع اللہ، مفتی شمیم قاسمی، حافظ احد، حافظ تراب الدین کے علاوہ مولانا عبدالرقیب، بانسواڑہ، مولانا غوث بچکندہ، مولانا عبدالعلیم، مولانا رضوان قاسمی، مفتی رفیق ذاکر، مولانا لئیق احمد، مولانا صابر،حافظ جلال بھیمگل، مولانا کبیر الدین، مولانا الماس، حافظ عبدالرشید نندی پیٹھ، عبدالقدوس، حافظ ابراہیم سیف، حافظ نسیم اللہ کے علاوہ علماء و حفاظ اور سیاسی قائدین نے شرکت کی۔ مولانا سید ولی اللہ قاسمی کی دعاپر اجلاس کااختتام عمل میں آیا۔

TOPPOPULARRECENT