Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / قیام تلنگانہ کے وعدہ کی تکمیل کیلئے مرکز پر زور

قیام تلنگانہ کے وعدہ کی تکمیل کیلئے مرکز پر زور

تلنگانہ قائدین کی وزیر اعظم سے ملاقات، چیف منسٹر کی قرارد اد سے اظہار بے تعلقی

تلنگانہ قائدین کی وزیر اعظم سے ملاقات، چیف منسٹر کی قرارد اد سے اظہار بے تعلقی
حیدرآباد۔/5فبروری، ( این ایس ایس ) وزیر اعظم منموہن سنگھ سے آج تلنگانہ کے کانگریس قائدین نے ملاقات کرتے ہوئے مزید کسی تاخیر کے بغیر علحدہ ریاست تلنگانہ کے قیام کیلئے مرکز کے وعدہ کو پورا کرنے کی درخواست کی۔ مسٹر جانا ریڈی نے اپنے ساتھی دیگر وزراء پونالہ لکشمیا، جے گیتا ریڈی، ڈی کے ارونا، سنیتا لکشما ریڈی،سابق وزیر محمد علی شبیر اور دوسروں کے ساتھ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے وزیر اعظم سے اپیل کی ہے کہ چیف منسٹر این کرن کمار ریڈی اور دیگر سیما آندھرا قائدین کی سخت مخالفتوں کے باوجود پارلیمنٹ میں بعجلت ممکنہ تلنگانہ بل کی منظوری کیلئے تمام ضروری اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ پارلیمنٹ اس بل کو منظور کرے گا اور مرکزی حکومت سیما آندھرا قائدین کے دباؤ کے آگے نہیں جھکے گی۔ جانا ریڈی نے چیف منسٹر کے خاموش احتجاج کی مذمت کی اور کہا کہ یہ ان کی آخری کوشش ہے۔

تلنگانہ کے کسی بھی لیڈر نے کرن کمار ریڈی کی قرارداد کی تائید نہیں کی تھی جبکہ وہ ( کرن ) اسمبلی میں اس بل کو مسترد کئے جانے کا دعویٰ کررہے ہیں۔ شریمتی ڈی کے ارونا نے کہا کہ تلنگانہ قائدین اسمبلی میں چیف منسٹر کی طرف سے منظورہ قرارداد کے فریق نہیں ہیں اور پارلیمانی جمہوریت میں اس قسم کی قرارداد کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔ ڈی کے ارونا نے کہا کہ سیما آندھرا قائدین آخر کس کیلئے متحدہ ریاست کے مطالبہ پر مرکز کو مجبور کررہے ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ کرن کمار ریڈی تقسیم کے مسئلہ پر دوغلی باتیں کررہے ہیں۔ ڈاکٹر جے گیتاریڈی نے بھی کرن کمار ریڈی کے باغیانہ تیور پر ناخوشی کا اظہار کیا اور کہا کہ جب پارٹی ہائی کمان نے ریاست کو تقسیم کرنے کا فیصلہ کیا ہے تو آیا کس طرح چیف منسٹر اس کی مخالفت کرسکتے ہیں۔ شریمتی سنیتا لکشما ریڈی نے الزام عائد کیا کہ کرن کمار ریڈی اس علاقے کے عوام کو دھوکہ دے رہے ہیں۔ سیما آندھرا قائدین کو چاہیئے کہ وہ اس قسم کے گھناؤنے عزائم سے باز رہیں کیونکہ ایسی کوششیں پارلیمنٹ میں تلنگانہ بل کی منظوری کو روکنے میں کامیاب نہیں ہوں گی۔

TOPPOPULARRECENT