Monday , May 28 2018
Home / شہر کی خبریں / قیدیوں کی پینٹنگس کی نمائش غیر معمولی بن گئی

قیدیوں کی پینٹنگس کی نمائش غیر معمولی بن گئی

فنکارانہ حُسن ،فطرت سے محبت کو مصوری کے نمونوں میں پیش کیاگیا
حیدرآباد، 12مئی (یواین آئی )دیکھنے میں یہ معمول کی پینٹنگ نمائش نظر آرہی تھی تاہم یہ معمولی پینٹنگ کی نمائش نہیں تھی بلکہ اس میں سلاخوں کے پیچھے کے جذبات ، احساسات اور فطرت سے محبت کو اجاگر کیا گیا ہے ۔ فنکارانہ حُسن ان مصوری کے نمونوں میں جھلک رہا تھا۔یہ فنکارانہ حُسن سخت لوہے کی سلاخوں کے پیچھے رہنے والے قیدیوں کا ہے ۔جی ہاں،حیدرآباد کی چنچل گوڑہ اور چرلہ پلی جیلوں کے قیدیوں نے اپنی مصوری کے نمونوں کے ذریعہ یہ ثابت کردیا کہ وہ بھی پینٹنگ کر سکتے ہیں۔ ان کی پینٹنگس کے نمونوں میں فطرت سے ان کی محبت ظاہر کی گئی ہے ۔ان دونوں جیلوں کے قیدیوں کی پینٹنگس کی دس روزہ نمائش کا اہتمام کلاکرتی آرٹ گیلری بنجاراہلز کی جانب سے کیا گیا تھا جس کودیکھ کرکئی افراد حیرت زدہ ہوگئے ۔محکمہ محابس نے ان قیدیوں کی 100پینٹنگس کو نمائش کے لئے پیش کرنے کی اجازت دی تھی۔اس کا افتتاح 27اپریل کو ڈائرکٹر جنرل محکمہ محابس کی جانب سے کیا گیا تھا ۔ان پینٹنگس کے نمونوں میں بہترین نظاروں،لینڈ اسکیپ ، مذہبی پینٹنگس کو بھی شامل کیا گیا تھا۔ابتدا میں اس نمائش پر عوام کا ردعمل کافی سست تھا تاہم بعد ازاں تقریبا 80 فیصد پینٹنگس فروخت ہوگئیں ۔ اس نمائش کا اختتام پیر کو عمل میں آیا۔محکمہ محابس کو ان پینٹنگس کی فروخت سے 2.60 لاکھ روپئے کی آمدنی ہوئی۔ان پینٹنگس کے خریداروں میں تلگو فلم انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے افراد،فائن آرٹس ممبئی کے طلبہ اور تاجر بھی شامل ہیں ۔ان پینٹنگس کی سائز کی بنیاد پر قیمت کا تعین کیا گیا۔ان کو خریدنے کے لئے آنے والے افرد نے قیدیوں کی صلاحیتوں کی کافی ستائش کی ۔ اس طرح یہ ایکسپو معمولی نہیں بلکہ غیر معمولی بن گیا ۔فنکار سید شیخ کی مدد سے قیدیوں کو پینٹنگس کے بارے میں اورینٹیشن دیا گیا اور ان کو بتایا گیا کہ مصوری کے نمونوں کے لئے کس طرح کا سامان استعمال کرنا چاہئے ۔ 35قیدیوں کو پینٹنگس بنانے کی تربیت دی گئی جس کے بعد ان کی بنائی گئی پینٹنگس کی نمائش کرتے ہوئے ان کی صلاحیتوں کو اجاگر کیاگیا۔

TOPPOPULARRECENT