Sunday , July 22 2018
Home / Top Stories / لالو ، چوتھے چارہ اسکام کیس میں بھی مجرم ، جگناتھ مشرا بری

لالو ، چوتھے چارہ اسکام کیس میں بھی مجرم ، جگناتھ مشرا بری

سی بی آئی کی خصوصی عدالت کا فیصلہ ، تبصرہ سے آر جے ڈی سربراہ کا انکار

رانچی ۔ 19مارچ ۔(سیاست ڈاٹ کام) سی بی آئی کی ایک خصوصی عدالت نے چوتھے چارہ اسکام کے ایک مقدمہ میں بہار کے سابق چیف منسٹر لالو پرساد یادو کو جرم کا مرتکب قرار دیا ہے تاہم ایک دوسرے سابق چیف منسٹر جگناتھ مشرا کو بری کردیا ۔ سی بی آئی کے جج شیوپال سنگھ نے ایک اور چارہ اسکام کے جرم میں فی الحال جیل میں قید 69 سالہ لالو یادو اور دیگر 18 ملزمین کو مجرم قرار دیا لیکن مشرا اور دیگر 12 ملزمین کو بری کردیا ۔ یہ مقدمہ 38A/96 ، 1990 ء کی دہائی کے اوائل میں ڈومکا ٹریژیری سے دھوکہ دہی اور جعلسازی کے ذریعہ3.13کروڑ روپئے کی دستبرداری سے متعلق تھا ۔ مجرم قرار دیئے گئے افراد کے خلاف 120 ( ب ) (مجرمانہ سازش) ،409 (تغلب)، 420 ( دھوکہ دہی) ، 467 ( جعلسازی)، 468 (دھوکہ دہی کے مقصد سے جعلسازی) ، 471 ( فرضی دستاویزات کا اصلی دستاویزات کے طورپر استعمال ) ، 477 ( الف ) انسداد رشوت ستانی وغیرہ کے تحت الزامات وضع کئے گئے تھے ۔ لالو پرساد نے فیصلے کے اعلان کے بعد جیل سے باہر نکلتے ہوئے وہاں موجود اخباری نمائندوں سے کہاکہ وہ کوئی تبصرہ کرنا نہیں چاہتے ۔ ان کی پارٹی آر جے ڈی کے نائب صدر رگھوینش پرساد سنگھ نے کہا کہ اس فیصلے کو ہائی کورٹ میں چیلنج کیا جائے گا ۔ لالو پرساد چارہ اسکام کے چوتھے مقدمہ میںمجرم قرار دیئے گئے ہیں وہ دوسرے مقدمہ میں مجرم قرار پائے جانے کے بعد 23 ڈسمبر سے رانچی کی بسرا منڈا جیل میں قید ہیں۔ قبل ازیں لالو یادو کو 30 ستمبر 2013 ء میں چائیباسہ چارہ اسکام کے مقدمہ میں بھی جرم کا مرتکب پایا گیا تھا ۔ انھیں پانچ سال کی سزائے قید دیئے جانے کے بعد لوک سبھا کی رکنیت کے لئے نااہل قرار دیتے ہوئے قید کی معیاد کی تکمیل کے بعد چھ سال تک انتخابی مقابلہ کرنے سے بھی محروم کردیا گیا تھا ۔ دوسری طرف جگناتھ مشرا چارہ اسکام کے دو مقدمات میں مجرم قرار دیئے گئے ہیں اور دیگر دو مقدمات میں بری کئے گئے ہیں۔ چارہ اسکام کا پانچواں مقدمہ رانچی کی عدالت میں زیردوران ہیں۔

TOPPOPULARRECENT