Wednesday , December 13 2017
Home / ہندوستان / لاٹھی چارج میں سوراج ابھیان کے کارکنان شدید زخمی

لاٹھی چارج میں سوراج ابھیان کے کارکنان شدید زخمی

پولیس کی نگرانی میں غنڈوں کے ذریعہ حملہ کروایا گیا ، یوگیندر یادو کا الزام
نئی دہلی ۔ 10 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : جنترمنتر نئی دہلی میں پولیس اور یوگیندر یادو کی زیر قیادت سوراج ابھیان کے والینٹرس میں تصادم ہوگیا جس میں 9 افراد بشمول 3 پولیس ملازمین زخمی ہوگئے ۔ یہ واقعہ کل شب اس وقت پیش آیا جب والینٹرس سابق عام آدم پارٹی لیڈر یوگیندر یادو کی زیر قیادت جنترمنتر سے ٹریکٹر مارچ نکالنے کی تیاری میں تھے ۔ پولیس نے بتایا کہ یوم آزادی تقاریب کے سیکوریٹی انتظامات کے پیش نظر جنترمنتر پر بیٹھے ہوئے احتجاجیوں کو ہٹا دیا گیا ۔ تاہم والینٹرس کا دعویٰ تھا کہ ٹریکٹر مارچ کے بارے میں دہلی پولیس کو اطلاع دیدی گئی تھی ۔ لیکن یوگیندر یادو کے تقریبا 25 کارکنوں نے مداخلت کرتے ہوئے پولیس پر برہم ہوگئے ۔ جب کہ پولیس نے احتجاجیوں سے کہا تھا کہ سیکوریٹی انتظامات کے پیش نظر علاقہ جنترمنتر کا تخلیہ کردیں ۔ اس کے باوجود والینٹرس نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کیا ۔ جس پر بحث و تکرار ہوگئی ۔ عام آدمی پارٹی رکن اسمبلی پنکج پشکر نے الزام عائد کیا کہ پولیس نے لاٹھی چارج کرتے ہوئے کارکنوں پر حملہ کردیا ۔ لیکن پولیس نے اس کی تردید کردی ۔ پرشانت بھوشن اور یوگیندر یادو کی زیر قیادت سوراج ابھیان کے سلسلہ میں ہزارہا کسان آج کی ٹریکٹر مارچ میں شریک ہونے والے تھے ۔ مسٹر پنکج پشکر نے بتایا کہ سوراج ابھیان کے کارکن کل شب ’ کسان ریالی ‘ کی تیاری میں تھے ۔ بعض پولیس ملازمین جو کہ سادہ لباس میں تھے تقریبا 11 بجے جنترمنتر پہنچے اور لاٹھی چارج کرتے ہوئے احتجاجیوں کو منتشر کردیا ۔ اطلاع ملتے ہی میں ( پشکر ) اور یوگیندر یادو وہاں پہنچ کر ایک پولیس اہلکار کو پکڑ لیا اور اس کا شناختی کارڈ طلب کیا ۔ لیکن اس نے ہمارے ساتھ بھی بدتمیزی کی مسٹر پشکر نے بتایا کہ اچانک کسی کی ہدایت پر یہ پولیس ملازمین وہاں سے فرار ہورہے تھے کہ دھکم پیل میں ہمارے 6 کارکن زخمی ہوگئے جنہیں KMC ہاسپٹل میں شریک کروایا گیا ۔ انہوں نے بتایاکہ مقامی اے سی پی کو طلب کر کے واقعہ کے بارے میں دریافت کیا گیا لیکن پولیس عہدیدار بھی یہ شناخت نہیں کرسکے کہ حملہ آور پولیس ملازمین کون تھے ۔ یوگیندر یادو نے اس واقعہ پر حیرت کا اظہار کیا اور بتایا کہ ہمارے 6 کارکن شدید زخمی ہوگئے لیکن پولیس دروغ گوئی سے کام لے رہی ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ پولیس کی حفاظت میں بعض غنڈوں نے جنترمنتر پر ہمارے والینٹرس پر حملہ کردیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT