Tuesday , December 12 2017
Home / جرائم و حادثات / لاپتہ طالبہ کا رشتہ دار کے ہاتھوں قتل

لاپتہ طالبہ کا رشتہ دار کے ہاتھوں قتل

حیدرآباد۔/7اکٹوبر، ( سیاست نیوز) جیڈی میٹلہ حدود سے پراسرار طور پر لاپتہ ڈگری کی طالبہ اپنے رشتہ دار کے ہاتھوں قتل کردی گئی۔ بتایا جاتا ہے کہ قاتل نے نعش کو ٹھکانے لگانے کے بعد پرسکون انداز میں خود سپردگی اختیار کرتے ہوئے پولیس کو بھی حیرت میں ڈال دیا۔ بتایا جاتا ہے ک 19سالہ سومیا جو جیڈی میٹلہ علاقہ کے ساکن شخص سینو کی بیٹی تھی اپنے پھوپی زاد بھائی کرشنیا کے ہاتھوں ہلاک کردی گئی۔ کرشنیا نے سومیا کا قتل کرنے کے بعد اس کی نعش کو ایک تھیلے میں باندھ کر موٹر سیکل کے ذریعہ تالاب منتقل کیا اور آئی ڈی پی ایل کے تالاب میں اس طالبہ کی نعش کو پھینکنے کے بعد اپنے مکان پہنچا اور مکان میں آرام کرنے کے بعد وہ سیدھے کوکٹ پلی پولیس اسٹیشن پہنچا جہاں اس نے اپنے جرم کو قبول کرتے ہوئے خود سپردگی اختیار کرلی۔ مجرم نے پولیس کو بتایا کہ سومیا سے اس کی منگنی ہوچکی تھی جو ڈگری سال اول کی طالبہ تھی۔ اس لڑکی کا غیر لڑکوں سے بات کرنا اور ہنسی مذاق اس شخص کو پسند نہیں تھا۔ گزشتہ روز بات کرنے کے بہانے اپنے مکان طلب کرنے کے بعد اس نے سومیا کا گلا گھونٹ کر قتل کردیا۔ قتل سے قبل دونوں میں بحث و تکرار ہوگئی اور جھگڑا بھی ہوا تھا۔ کوکٹ پلی پولیس نے قاتل کو جیڈی میٹلہ پولیس کے حوالے کردیا۔ تاہم تحقیقات کے دوران پولیس نے اس بات کی توثیق کی کہ سومیا اور کرشنیا کی منگنی نہیں ہوئی تھی، وہ محض اس کا پھوپی زاد بھائی تھا۔تاہم یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ سومیا کی پہلے ہی شادی ہوچکی تھی جو اپنے سسرال جانا پسند نہیں کرتی تھی اور افراد خاندان نے اس کے رشتہ کو ختم کردیا تھا۔ پولیس جیڈی میٹلہ مصروف تحقیقات ہے۔

TOPPOPULARRECENT