Thursday , January 18 2018
Home / دنیا / لاپتہ طیارہ کی تلاش کیلئے جادوائی عمل

لاپتہ طیارہ کی تلاش کیلئے جادوائی عمل

مافوق الفطرت طاقت کے دعویدار عاملوں سے حصول مدد کی تردید

مافوق الفطرت طاقت کے دعویدار عاملوں سے حصول مدد کی تردید
کوالالمپور ۔ 14 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ملائیشیاء نے جو اپنے لاپتہ طیارہ کی تلاش میں ناکامی کیلئے مختلف گوشوں کی تنقیدوں کا شکار ہیں، آج اس بات کی تردید کی ہیکہ طیارہ کی تلاش میں آسمانی مدد کے حصول کیلئے عجیب و غریب جادوائی رسومات کی ادائی کے مقصد سے سرکردہ مسلم جادوگر کی خدمات سے استفادہ کیا گیا تھا۔ مسلم اکثریتی ملک ملائیشیاء میں سرکاری، مذہبی نگرانکار ادارہ نے کہا کہ وہ کوالالمپور انٹرنیشنل ایرپورٹ کو ایک خصوصی ٹیم روانہ کررہا ہے تاکہ اس قسم کے واقعات کا مستقبل میں کوئی اعادہ نہ ہوسکے۔ ایک خودساختہ عامل ابراہیم مات زین نے اس ہفتہ کے اوائل میں عجیب و غریب مذہبی رسومات انجام دیا تھا جس کے فوٹوز اور ویڈیو کلپ دنیا بھر میں پھیل گئے اور ساری دنیا میں اس عمل کا مذاق اڑایا گیا جس پر برہم ملائیشیائی سرکاری مذہبی ادارہ نے کہا کہ اس قسم کے ڈھونگی عناصر کو سنگین عواقب کا سامنا کرنا ہوگا۔

80 سالہ ابراہیم مات زین نے جادوئی عمل کے دوران اپنے تین چیلوں کو بزنس سوٹس پہن کر پردوں پر بیٹھنے کی ہدایت کی تھی اور وہ اپنے سروں پر مختلف اشیاء اٹھائے ہوئے تھے جن میں بڑے سبز ناریل بھی شامل تھے۔ حکومت نے کہا کہ ’’کوالالمپور انٹرنیشنل ایرپورٹ پر جہاں تک بوموہ یا شامان (جادوگروں یا عاملوں) کی موجودگی کا تعلق ہے۔ ہم پوری وضاحت کے ساتھ یہ کہنا چاہتے ہیں کہ نہ تو حکومت نے اور نہ ہی اس کے اداروں کا اس میں کوئی عمل دخل رہا ہے‘‘۔ ملائیشیاء میں مافوق الفطرت سرگرمیوں کو اسلامی حکام مذہبی حکام نے غیر اسلامی قرار دیتے ہوئے ممنوع قرار دیا ہے لیکن کئی افراد اب بھی اپنی صحت کے مسائل اور شخصی معاملات میں مافوق الفطرت مدد کے حصول کیلئے بوموہ اور شامانوں سے (عاملوں اور جادوگروں سے) رابطے پیدا کیا کرتے ہیں۔ ملائیشیائی ایرلائنس کا طیارہ 370 ہفتہ کی صبح 239 مسافرین کے ساتھ دوران پرواز غائب ہوگیا تھا۔ بین الاقوامی سطح پر بڑے پیمانے پر تلاش کے باوجود طیارے کے حشر کا پتہ چلانے میں ناکامی ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT