Saturday , September 22 2018
Home / سیاسیات / للت مودی نے مجھ سے ملاقات کی تھی : شردپوار

للت مودی نے مجھ سے ملاقات کی تھی : شردپوار

’’میں نے انھیں وطن واپسی اور قانون کا سامنا کرنے کا مشورہ دیا ‘‘

’’میں نے انھیں وطن واپسی اور قانون کا سامنا کرنے کا مشورہ دیا ‘‘
ممبئی ، 17 جون (سیاست ڈاٹ کام)این سی پی کے سربراہ شردپوار نے للت مودی کو ہندوستان واپس ہوکر قانون کا سامنا کرنے کا مشورہ دیا تھا جب ماہ مئی میں لندن میں سابق مرکزی وزیر سے آخرالذکر نے ملاقات کی تھی لیکن مفرور سابق آئی پی ایل سربراہ نے کہاکہ اُنھیں واپسی پر اپنی جان کیلئے خطرہ محسوس ہوتا ہے ۔ پوار نے آج میڈیا والوں کو بتایا کہ ’’میری لندن میں رواں سال وسط مئی میں للت مودی سے ملاقات ہوئی تھی اور میں نے انھیں ہندوستان واپس ہوکر قانون کا سامنا کرنے کا مشورہ دیا تھا ۔ انھوں نے کہا کہ وہ اپنے خلاف دائر مقدمات کے تعلق سے فکرمند نہیں بلکہ اُنھیں سکیورٹی خطرہ درپیش ہے اور وہ اپنی جا ن کیلئے جوکھم محسوس کرتے ہیں ۔ قبل ازیں میں نے للت مودی کو سکیورٹی خطرہ کے تعلق سے ایک عہدیدار کو بھی واقف کرایا تھا ‘‘۔ پوار جو سابق صدر بی سی سی آئی ہیں ، انھوں نے کہاکہ وہ ایسی پیشکش بھی کرچکے ہیں کہ اگر للت مودی وطن واپس ہونا چاہیں تو وہ ہندوستانی حکومت سے بات کرسکتے ہیں۔ وزیر اُمور خارجہ سشما سوراج کی جانب سے للت مودی کو برطانیہ میں سفری کاغذات کے حصول میں مدد کئے جانے کے معاملے میں جاری سیاسی طوفان کے تعلق سے پوچھنے پر پوار نے کہا کہ اس مسئلہ کو غیرضروری طورپر بڑھاچڑھاکر پیش کیا جارہا ہے ۔ اس تنازعہ کے پیش نظر حکومت پر کانگریس کی جانب سے مسلسل حملوں کے تعلق سے ویٹرن این سی پی لیڈر نے کہاکہ اپوزیشن پارٹی کو ایک مسئلہ ہاتھ لگا ہے ، اس لئے وہ اس بارے میں شدت اختیار کررہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT