Friday , November 17 2017
Home / سیاسیات / لوک ایوکت پر کابینی سفارشات ناقابل قبول : گورنر یوپی

لوک ایوکت پر کابینی سفارشات ناقابل قبول : گورنر یوپی

جسٹس ( ریٹائرڈ ) رویندر سنگھ کے سوا دوسرا نام تجویز کرنے کی ہدایت
لکھنو۔ 25 اگست ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )گورنر اُترپردیش رام نائیک نے آج لوک ایوکت کے تقرر کیلئے ریاستی حکومت کی فائیل کو واپس کردیا اور کہا کہ وہ کابینہ کی سفارشات کو قبول کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں ۔ گورنر نے ریاستی حکومت کو ہدایت دی کہ وہ جسٹس ( ریٹائرڈ ) رویندر سنگھ کے ماسوا دیگر کے نام کی تجویز پیش کرے تاکہ اس طریقہ کار کو پورا کرلیا جاسکے ۔ گورنر نے کابینہ کی فائیل واپس کرتے ہوئے کہا کہ وہ لوک ایوکت کے تقرر کے عمل میں حکومت کے اپنے فیصلہ کو قبول کرنے کے پابند نہیں ہے کیوں کہ لوک ایوکت کے تقرر کے معاملہ میں کابینہ کا کوئی رول نہیںہوگا ۔ گورنر نے چیف منسٹر اکھلیش یادو کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے ان کی نقل اپوزیشن لیڈر سوامی پرساد مئیوریا اور ہائیکورٹ چیف جسٹس کو بھی روانہ کی ہے اور ان سے توقع ظاہر کی ہے کہ وہ لوک ایوکت کیلئے دوسرا نام تجویز کرکے روانہ کریں۔ جسٹس ( ریٹائرڈ ) رویندر سنگھ کی بجائے کسی اور نام پر غور کیا جائیگا ۔ اس سلسلہ میں سپریم کورٹ کی ہدایات کو ملحوظ رکھا گیا ہے ۔ لوک ایوکت کے تقرر کیلئے دستوری تقاضوں کو پورا کرنا ضروری ہوتا ہے ۔ اپوزیشن لیڈر کے مطابق لوک ایوکت کسی نام کی تجویز پر اتفاق رائے یا تبادلۂ خیال نہیں کیا گیا اس بارے میں انتخابی کمیشن کے ارکان بھی لاعلم ہیں ۔ چیف جسٹس رویندر سنگھ کے تعلق سے یہ رائے ہے کہ وہ حکمراں پارٹی سے قربت رکھتے ہیں اس لئے لوک ایوکت کام پر اثر پڑے گا ۔ ان کے نام کی سفارش نامناسب ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT