Tuesday , January 23 2018
Home / Top Stories / لو جہاد ‘ ہندوتوا کارکنوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ : سی پی ایم

لو جہاد ‘ ہندوتوا کارکنوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ : سی پی ایم

نئی دہلی 18 اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سی پی ایم نے لو جہاد کے نام پر فرقہ وارانہ منافرت پھیلانے کی پاداش میں ہندوتوا کارکنوں کے خلاف سخت کارروائی کا آج مطالبہ کیا ۔ پارٹی نے اس بات پر حیرت کا اظہار کیا کہ بی جے پی بھی اس طرح کے پروپگنڈہ میں ملوث ہے تاکہ دو فرقوں کے مابین نفرت کی آگ پھیلائی جاسکے ۔ پارٹی کے جنرل سکریٹری مسٹر پرکاش کرت نے چیف منسٹر اتر پردیش اکھیلیش سنگھ یادو کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ میرٹھ میں پیش آئے واقعہ پر توجہ دلائیں جس میں دو بالغ افراد کے مابین تعلقات کو ایک فوجداری مسئلہ عصمت ریزی اور زبردستی تبدیلی مذہب کا رنگ دیدیا گیا تھا ۔ اس میں ہندوتوا تنظیمیں ملوث ہیں اور فرقہ وارانہ منافرت پھیلا رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس نفرت انگیز مہم کیلئے متعلقہ خاتون کے کچھ رشتہ داروں کا استحصال کیا گیا ۔ اس طرح کے جھوٹے اور مجرمانہ پروپگنڈہ کے جرم میں بی جے پی بھی ملوث ہے اور اس کا مقصد سماج کے دو طبقات کے مابین نفرت پھیلانا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT