Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / لڑکوں اور لڑکیوں کوبچہ مزدوری اور انسانی اسمگلنگ سے بچانا ضروری

لڑکوں اور لڑکیوں کوبچہ مزدوری اور انسانی اسمگلنگ سے بچانا ضروری

راجندر نگر میں طلبہ کی ریلی اور انسانی زنجیر ،نوبل انعام یافتہ جہد کارکیلاش ستیارتھی کا خطاب
شمس آباد۔/20ستمبر، ( سیاست نیوز) راجندر نگر کے علاقہ آرام گھر چوراہے پر بھارت یاترا میں باوقار نوبل انعام یافتہ جہد کار کیلاش ستیارتھی نے شرکت کرتے ہوئے آرام گھر چوراہا پر انسانی زنجیر بناکر بچوں کی حفاطت اور محفوظ بھارت بنانے کیلئے آواز اٹھاتے ہوئے مختلف اسکولی طلباء کے ہمراہ ریلی شیورام پلی ضلع پریشد اسکول پہنچی جہاں ستیارتھی نے اس موقع پر خطاب کے دوران کہا کہ سارے ملک کو بچوں کے تحفظ کیلئے ہم تمام کو متحدہ جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے۔ اسکولی طلباء کیلئے یہاں جلتی ہوئی مشعل کے ساتھ جدوجہد کررہے ہیں اور ہمارے دلوں میں بھی ان بچوں کیلئے اس آگ کی تپش اور روشنی ہونی چاہیئے۔ ملک بھر میں ہیومن گریفکنگ اور لڑکیوں کی خرید و فروخت اور لڑکیوں کے ذریعہ جنسی استحصال کے خلاف ٹی این جی اوز، سیاسی پارٹیاں اور والدین بھی شامل ہوکر اپنی آواز بلند کررہے ہیں۔ لڑکیوں کی تجارت اور جنسی استحصال کرنے والوں کی اب اُلٹی گنتی شروع ہوچکی ہے۔ انھیں یہ سودا اب بہت مہنگا پڑے گا ان سب کیلئے نئے قانون بنانے کیلئے حکومت پر زور ڈالا جائے گا اور اس کے خاتمہ تک ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔ ہم اپنے مقصد میں ضرور کامیاب ہوں گے۔ ہم سب کو ملکر سماج سے اس لعنت اور گندگی کو صاف کرنے کی ضرورت ہے۔ بچوں پر ہونے والے ظلم کو روکنا ہمارا مقصد ہے۔ کیلاش ستیارتھی نے تمام حاضرین کو عہد دلایا کہ ہمارے ملک کو محفوظ بھارت، اس ریاست کو محفوظ تلنگانہ اور اس تاریخی شہر کو بچوں کے لئے محفوظ حیدرآباد بنایا جائے گا۔ رچہ کنڈہ پولیس کمشنر مہیش بھگوت نے اپنی مخاطبت میں کہا کہ بچوں پر ظلم کے خلاف آواز اٹھاتے ہوئے کیلاش ستیارتھی نے بہترین اقدام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رچہ کنڈہ میں جنوری میں 498 بچوں کو جبری مزدوری اور بردہ فروشی سے بچالیا گیا۔ بھگوت نے کہا کہ اب تک 800 سے زائد بچوں کو انسانی اسمگلنگ سے بچالیا گیا۔ رچہ کنڈہ میں 953 شکایات موصول ہوئی تھیں جس میں 1300 بچوں کو بچایا گیا۔ 1100 افراد کو گرفتار کیا گیا۔ مختلف اسکولس کے طلباء نے ریالی میں شرکت کرتے ہوئے پلے کارڈس تھامے ’’ آواز دو ہم ایک ہیں ‘‘ اور ’’ ظلم نہیں چلے گا‘‘ جیسے نعرے لگائے۔ اس موقع پر ویزیندرا ہوئی ڈائرکٹر ویمنس چائیلڈ ویلفیر، شمس آباد ڈی سی پی پی وی پدمجا، عظمت اللہ غوری، احمدیہ مسلم کمیونٹی صدر کے علاوہ عوام کی کثیر تعداد موجود تھی۔

TOPPOPULARRECENT