Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / لکڑی کا پل میں رات دن ٹریفک جام سے شہری پریشان

لکڑی کا پل میں رات دن ٹریفک جام سے شہری پریشان

مصروف ترین سڑک پر ٹریفک کو بحال کرنے میں پولیس بری طرح ناکام
حیدرآباد ۔ 14 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز): شہر حیدرآباد میں ٹریفک کی دہشت سے ان دنوں لکڑی کا پل جیسا علاقہ پریشانی کا شکار ہے ۔ ہاسپٹلس جیسے ایمرجنسی سہولیات کے اس علاقہ میں دن تو دن رات کے وقت ٹریفک کا سنگین مسئلہ پایا جاتا ہے ۔ جہاں 8 تا 10 بڑے اور معروف ہاسپٹل موجود ہیں ۔ ٹریفک جام سے شہری بے پناہ مشکلات کا شکار ہیں ۔ افسوس تو اس بات کا ہے کہ ایمرجنسی سہولت جیسے ایمبولنس کے لیے بھی رات کے وقت اس علاقہ سے گزرنا انتہائی مشکل عمل بن گیا ہے ۔ باوجود اس سنگین صورتحال پر اقدامات کرنے والا کوئی نہیں ؟ جب کہ لکڑی کا پل علاقہ ہر لحاظ سے اہمیت اور شہر کے اہم ترین راستوں کو جوڑنے کا مرکز بھی ہے اور اس علاقہ کو انتہائی سیکوریٹی علاقوں کی اہمیت بھی حاصل ہے ۔ ریاستی پولیس ہیڈکوارٹر ، انٹلی جنس ہیڈکوارٹر ، قریب میں سکریٹریٹ ہونے کے باوجود پولیس ٹریفک جام کے مسئلہ کو حل کرنے میں ناکام ثابت ہورہی ہے ۔ اس علاقہ میں نیلوفر ، مہدی نواز جنگ ، لوٹس ، کیورویل ، سیہا ، گلوبل ، کرشنا ، جیسے ہاسپٹلس پائے جاتے ہیں اور رات ہوتے ہی اس علاقہ میں ٹریفک جام سے دہشت پیدا ہوتی ہے ۔ مریضوں کے رشتہ داروں کے علاوہ اس راستے سے گذرنے والا ہر شہری پریشان ہے ۔ اس علاقہ میں ٹریفک جام کا اصل سبب خانگی ٹور آپریٹرس کی سرگرمیاں ہیں ۔ جو رات 9 بجنے کے بعد سے اپنی کارروائی شروع کرتے ہیں ۔ گھنٹوں سرکوں پر بڑی گاڑیوں کو روک دیا جاتا ہے اور ایک کے بعد ایک بڑی بسوں سے راستہ تنگ اور ٹریفک جام شہری کشادہ سڑکیں ہونے کے باوجود اپنی گاڑی کو آسانی سے گذار نہیں سکتے اور اس راستہ سے گذرنے والے ان اوقات کے خوف سے پریشانی کا شکار ہیں ۔ حد تو یہ ہے کہ ایمبولنس سرویس کو بھی اس راستہ سے گذرنے میں مشکلات کا سامنا ہے ۔ جب کہ رنگاریلای کلکٹریٹ کے پیچھے پارکنگ کی سہولت فراہم کی گئی ہے اور اس علاقہ کی پارکنگ فیس کو ریلوے حکام حاصل کرتی ہیں ۔ یہ پارکنگ کا مقام اب ٹرک ٹرمنل کی شکل اختیار کر گیا ہے ۔ جس سے بدامنی پھیلنے کے قوی امکانات پائے جاتے ہیں ۔ بار بار ٹریفک پولیس کی توجہ دہانی اور شہریوں کی شکایت کے باوجود ٹریفک پولیس پر الزام ہے کہ وہ اس سنگین مسئلہ کو دیکھا ان دیکھا کررہی ہے ۔ پولیس کی جانب سے لاپرواہی اور عدم اقدامات کے سبب ٹریفک پولیس بھی شک کے دائرے میں آرہی ہے کہ آیا خانگی آپریٹرس سے مبینہ سازباز کے سبب ٹریفک پولیس اس سنگین مسئلہ کو حل کرنے میں ناکام ہے ۔ ارباب مجاز کو چاہئے کہ وہ کمیونٹی پولیسنگ کے تحت ہی صحیح اس مسئلہ کی یکسوئی کو ممکن بنائے ۔۔

TOPPOPULARRECENT