Monday , September 24 2018
Home / پاکستان / لکھوی کی رہائی کا حکم ، حراست کا فیصلہ معطل

لکھوی کی رہائی کا حکم ، حراست کا فیصلہ معطل

لاہور؍ نئی دہلی۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کی ایک عدالت نے آج لشکر طیبہ کے کمانڈر ذکی الرحمن لکھوی کو رہا کرنے کا حکم دیا۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس محمد انوارالحق نے 55 سالہ لکھوی کو حکومت کی جانب سے حراست میں رکھنے کا فیصلہ معطل کردیا۔ کیونکہ حکومت لکھوی کے خلاف عدالت میں حساس ریکارڈس پیش کرنے میں قاصر رہی۔ جج نے لکھوی کو حکم دیا

لاہور؍ نئی دہلی۔ 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کی ایک عدالت نے آج لشکر طیبہ کے کمانڈر ذکی الرحمن لکھوی کو رہا کرنے کا حکم دیا۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس محمد انوارالحق نے 55 سالہ لکھوی کو حکومت کی جانب سے حراست میں رکھنے کا فیصلہ معطل کردیا۔ کیونکہ حکومت لکھوی کے خلاف عدالت میں حساس ریکارڈس پیش کرنے میں قاصر رہی۔ جج نے لکھوی کو حکم دیا کہ 10 لاکھ روپئے فی کس مالیاتی دو مچلکے داخل کئے جائیں تاکہ انہیں رہا کیا جاسکے۔ ہندوستان کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ ہندوستان کو اس مسئلہ پر تشویش سے حکومت ِ پاکستان ماضی میں بھی واقف رہ چکی ہے۔

ہمیں اس کا اعادہ کرنے کی ضرورت نہیں۔ مرکزی وزارت داخلہ نے اپنے بیان میں کہا کہ یہ تبدیلی مایوس کن ہے اور حکومت ِ پاکستان سے خواہش کی کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ لکھوی جیل سے باہر نہ آسکیں۔ دریں اثناء خصوصی وکیل استغاثہ اجول نکم نے کہا کہ 2008ء کے ممبئی دہشت گرد حملوں کے کلیدی سازشی ذکی الرحمن لکھوی کے رہائی کے احکام سے واضح ہوگیا ہے کہ پاکستان میں قانون کی حکمرانی نہیں ہے اور اس کا دہشت گردی کو کچل دینے کا دعویٰ سنجیدہ نہیں ہے۔ بی جے پی نے اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ لکھوی کی رہائی پر حکومت ہند کو چاہئے کہ پڑوسی ملک کے خلاف سخت کارروائی کی جائے اور حکومت ِ پاکستان سے خواہش کی کہ وہ دہشت گردی کے سلسلے میں دوہرے معیار اختیار نہ کرے۔ بی جے پی نے کہا کہ لکھوی ایک دہشت گرد ہے اور حکومت ِ پاکستان کو اسی انداز میں اس سے نمٹنا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT