Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / لینڈ سروے کے نام پر کسانوں کے حقوق سلب‘زمین داری نظام کے احیاء کی کوشش

لینڈ سروے کے نام پر کسانوں کے حقوق سلب‘زمین داری نظام کے احیاء کی کوشش

تلنگانہ رعیتو جے اے سی اور سیاسی جماعتوں کی ریاستی کانفرنس ‘ احتجاج شروع کرنے کی دھمکی ‘3اکٹوبر کومظاہرے
حیدرآباد۔25ستمبر(سیاست نیوز) لینڈ سروے کے نام پر کسانوں کے حقوق سلب کرنے کی کوششوں کو تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کبھی برداشت نہیںکریگی اور تمام محاذوں پر ہم حکومت کی من مانے کے خلاف آواز اٹھائیں گے۔ پروفیسر کودانڈرام چیرمن تلنگانہ پولٹیکل جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے یہ بات کہی۔ وہ آج یہاں فیاپسی میں تلنگانہ رعیتو جے اے سی ‘ کسان مورچہ منچ‘ تلگوکسان سمیتی ‘ کانگریس کسان سمیتی کے زیراہتمام منعقدہ ریاستی کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی‘سی پی ائی جوائنٹ سکریٹری پلا وینکٹ ریڈی‘ تلگودیشم قائد آر چندرشیکھر ریڈی‘سی پی ائی ایم نیو ڈیموکریسی گوردھن ریڈی‘ بی جے پی قائد گولی مدھو سدھن ریڈی ‘ ایڈوکیٹ رچنا‘ سنیل اسکالر نلسار یونیورسٹی نے بھی اس کانفرنس سے خطاب کیا۔ پروفیسر کودانڈرام نے کہاکہ تلنگانہ رعیتو جے اے سی حکومت تلنگانہ کے معلنہ لینڈ سروے کے خلاف 3اکٹوبر کو ریاست کے تمام گرام پنچایت دفاتر پرجمہوری طرز کا احتجاجی دھرنا منظم کریگی ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ ہمارا مقصد کسانوں کے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کا سدباب کرناہے۔ کودانڈرام نے مزیدکہاکہ حکومت تلنگانہ لینڈ سروے کے ذریعہ ریاست تلنگانہ میںدوبارہ زمیند ار سسٹم کو رائج کرنے کی کوشش کررہی ہے جو تلنگانہ کی عوام کے لئے قابل قبول نہیں ہے ۔ کودانڈرام نے مزیدکہاکہ حکومت تلنگانہ نے جی نمبر39اور42کے ذریعہ تمام قسم کے تحدیدات کسانوں پر عائد کررہی ہے ۔ انہوں نے مزیدکہاکہ حکومت تلنگانہ رعیتو کمیٹی بنائی مگر اس کی باگ ڈور پارٹی قائدین کے ہاتھ میںسونپ دی جس کی وجہہ سے کسان خود کو مجبور اور لاچار سمجھ رہے ہیں۔ پروفیسر کودانڈرا م نے حکومت تلنگانہ پر الزام عائد کیاکہ وہ کمیٹی کے ذریعہ کسانوں کو نہ صرف ان کے حق سے محروم کررہے ہیںبلکہ کسانوں کو پارٹی قائدین کے ہاتھوں یرغمال بنانے کی کوششیں بھی کی جارہی ہیں۔ کودانڈرام نے کہاکہ پراجکٹ اور دیگر ترقیاتی کامو ں کے نام پر کسانوں کی زرخیز اراضی ان سے چھننے کاکام کیاجارہا ہے اور معاوضے میںانہیں معمولی رقم دیکر ٹالنے کی کوششیں کی جارہی ہے ۔ انہو ںنے کہاکہ حکومت کی رعیتو کمیٹی حکومت او رکسانوں کے درمیان میں ایجنٹ کا رول ادا کررہی ہے جبکہ مذکورہ کمیٹی کی ذمہ داری ہے کہ وہ کسانوں سے ان کی مرضی کے بغیر چھینے جانے والی اراضی کو کسانوں کو واپس دلانے کاکام کرے۔ انہو ںنے کہاکہ کمیٹی ٹی آرایس پارٹی قائدین پر مشتمل ہے اسی وجہہ سے وہ کسانوں کے ساتھ انصاف کرنے سے محروم ہیں۔کودانڈرام نے کہاکہ تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی بالخصوص تلنگانہ رعیتو جے اے سی ریاست تلنگانہ کے کسانوں کا ان کا حق دلانے تک اپنی جدوجہد کو جاری رکھے گی۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی نے کہاکہ 3اکٹوبر کے مجوزہ احتجاجی دھرنے کی کانگریس پارٹی مکمل تائید وحمایت کا اعلان کرتی ہے۔ انہو ںنے مزیدکہاکہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے بعد ریاست کے اراضیات کا سروے ناگزیر ہے مگر جن شرائط اور قوانین کے تحت حکومت تلنگانہ سروے کاکام کررہی ہے۔ ( سلسلہ صفحہ 8پر)

TOPPOPULARRECENT