Sunday , November 19 2017
Home / کھیل کی خبریں / لیون کو 8 وکٹیں ، ہندوستان 189 رنز پر ڈھیر

لیون کو 8 وکٹیں ، ہندوستان 189 رنز پر ڈھیر

آسٹریلیا 40/0 ، کوہلی پھر گیند سمجھنے میں ناکام رہے

بنگلور۔4 مارچ (سیاست ڈاٹ کام)میدان بدلا‘ٹاس جیتا اور ٹیم میں تبدیلیاں بھی ہوئی لیکن ہندوستانی ٹیم کے مایوس کن مظاہروں میں کوئی تبدیلی نہیں آئی جیسا کہ دنیا کی نمبر ایک ہندستانی پونے کے بعد بنگلور میں جلد ڈھیر ہوگئی۔ آسٹریلیا کے آف اسپنر ناتھن لیون نے اپنی بہترین بولنگ کرتے ہوئے 50 رنز کے عوض 8  وکٹیں لیکر ہندستان کو دوسرے ٹسٹ کے پہلے 189 رنز پر ڈھیر کر دیا۔آسٹریلیا نے اس کے جواب میں دن کا کھیل ختم ہونے تک 16 اوور میں بغیر کوئی وکٹ کھوئے 40 رن بنا لئے ہیں۔ آسٹریلیا اب ہندستان کے اسکور سے 149 رنز پیچھے ہے ۔ڈیوڈ وارنر ایک زندگی ملی جس کا فائدہ اٹھا کر 23 رن اور میٹ رینش 15 رنز بنا کر کریز پر ہیں ۔ اجنکیا رہانے نے گلی میں فاسٹ بولر ایشانت شرما کی گیند پر وارنر کا کیچ چھوڑا ۔ اس وقت وارنر کا اسکور نو رن اور آسٹریلیا کا اسکور 19 رنز تھا۔ لیون نے ہندستانی زمین پر کسی بیرونی بولر اور بنگلور میں کسی بھی بولر کی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ ریکارڈ بنالیا ہے۔اوپنر لوکیش راہول نے یک طرفہ جدوجہد کرتے ہوئے 205 گیندوں میں نو چوکوں کی مدد سے 90 رنز کی اننگز کھیلی لیکن دوسرے بیٹسمینوں نے پونے کی طرح بنگلور میں بھی مایوس کیا اور لیون کے سامنے خود سپردگی کر بیٹھے ۔ہندوستان نے لنچ تک دو وکٹ اور چائے کے وقفہ تک پانچ وکٹ گنوائے تھے ۔لیکن چائے کے وقفہ کے بعد ہندوستان کے باقی پانچ وکٹ محض 21 رنز کا اضافہ میں پویلین لوٹ گئیں ۔

فاسٹ بولرمچل اسٹارک نے 39 رن پر ایک وکٹ اور پونے ٹسٹ میں12 وکٹ لینے والے  اسپنر اسٹیو او کیف نے 40 رن پر ایک وکٹ لیا۔ لیون کی اس سے پہلے ایک اننگز میں بہترین کارکردگی ہندوستان کے خلاف ہی 94 رن پر سات وکٹ تھی ۔ یہ کارنامہ انہوں نے مارچ 2013 میں دہلی کے فیروز شاہ کوٹلہ میدان میں انجام دیا تھا۔ ابھینو مکنڈ صفر، چتیشور پجارا 17، کپتان وراٹ کوہلی 12، اجنکیا رہانے 17، کرون نائر 26، روی چندرن اشون 7 ، وکٹ کیپر وردھمان ساہا ایک اور رویندر جڈیجہ 3رنزبنا کر پویلین لوٹ گئے ۔ ہندوستانی ٹیم پونے میں دونوں اننگز میں 105 اور 107 رن پرآؤٹ ہو گئی تھی تو کہا گیا تھا کہ وہ ہندوستان کیلئے  برا وقت اور آسٹریلیا کیلئے اچھا ٹاس جیتنا بتایا گیا تھا لیکن یہاں ہندوستانی کپتان ویراٹ کوہلی نے ٹاس جیتا لیکن کہانی وہی کی وہی رہی۔ ہندوستانی اننگز میں دوسرے وکٹ کیلئے 61 رن اور پانچویں وکٹ کیلئے 38 رن کی شراکت ہوئی۔ اس کے بعد تو ہندوستانی بیٹسمینوں کے وکٹ گرنے کا سلسلہ جاری رہا ۔ہندوستان نے اپنے آخر 6 وکٹ 33 رن جوڑ کر گنوائے ۔ پونے میں ہندوستان نے پہلی اننگز میں 11 رن کے اضافہ میں اپنے 7وکٹ اور دوسری اننگز میں 30 رن کے وقفے میں اپنے آخری 7 وکٹ گنوائے تھے ۔ بنگلور میں بھی یہی صورتحال رہی۔ دوسرے ٹسٹ میں زخمی مرلی وجے کی جگہ ابھینو مکنڈ کو اوپننگ میں لایا گیا لیکن وہ کھاتہ کھولے بغیر اسٹارک کی گیند پر تیسرے اوور میں ایل بی ڈبلیو ہو گئے ۔راہول اور پجارا نے دوسرے وکٹ کیلئے 61 رن کی ساجھے داری کی تو جب ایسا لگ رہا تھا کہ یہ شراکت داری ہندوستانی اننگز کو مضبوط موقف میں لے جائے گی تبھی لیون نے لنچ سے پہلے کے آخری اوور میں پجارا کو پیٹر ھینڈ سکمب کے ہاتھوں کیچ کراکر ہندوستان کو جھٹکا دیا۔

TOPPOPULARRECENT