Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / مائناریٹی میڈیکل کالجوں میں A زمرہ کی حد میں اضافہ

مائناریٹی میڈیکل کالجوں میں A زمرہ کی حد میں اضافہ

ہائیکورٹ کے فیصلہ کے بعد40 مسلم طلبہ کو فری سیٹ یقینی ، کل آخری مرحلے کی ویب کونسلنگ
حیدرآباد۔ 24 اگست (سیاست نیوز) ایم بی بی ایس میں داخلے کیلئے تلنگانہ کے تین مائناریٹی میڈیکل کالجس میں اے زمرہ کی فری سیٹ کو 60% کرنے کا ہائیکورٹ حیدرآباد نے فیصلہ صادر کرتے ہوئے کالوجی نارائن راؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسیس اور میڈیکل کے انتظامیہ کو حکم دیا کہ وہ فوری اثر کے ساتھ اے زمرہ کے 10% نشستوں کو بی زمرہ سے شامل کرتے ہوئے داخلہ دیں۔ یاد رہے کہ دکن میڈیکل کالج میں اے زمرہ میں 90 نشستیں دینا ہے جبکہ 76 نشستیں دی گئیں۔ شاداں میڈیکل کالج میں اے زمرہ میں 90 کے منجملہ 82 نشستیں الاٹ کی گئیں اور ڈاکٹر وی آر کے میڈیکل کالج فار ویمن میں 60 کے منجملہ 52 نشستیں دی گئیں۔ اب تیسرے اور آخری مرحلے کی ویب کونسلنگ 26 اگست کو صبح 8 بجے سے 27 اگست شام 4 بجے تک رکھی گئی ہے۔ ادارۂ سیاست کے اشتراک سے سرپرستوں کی اڈھاک کمیٹی ہائیکورٹ سے رجوع ہوئی اور مسلم امیدواروں کی پیروی نامور قانون داں شریمتی رچنا ریڈی نے کی اور کامیابی حاصل کرتے ہوئے یہاں دوسرے مرحلے میں 10% تک نشستوں کیلئے عبوری احکام حاصل کئے تھے اور آج قطعی فیصلے کے بعد بی زمرہ سے اے زمرہ میں شامل کرنے کا حکم دیا گیا۔ اس طرح 40 مسلم طلبہ کو تین میڈیکل کالجس میں ایم بی بی ایس میں فری سیٹ ملے گی۔ یعقوب زین العابدین اس مقدمہ کے معاون وکیل تھے۔ سرپرستوں اور طلبہ نے ادارۂ سیاست کے جناب زاہد علی خاں ایڈیٹر سیاست ، جناب ظہیرالدین علی خاں مینیجنگ ایڈیٹر سیاست، جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر سیاست ،کیریئر کونسلر ایم اے حمید اور منظور احمد سے اظہار تشکر کیا۔ مسلم طلبہ نے تیسرے مرحلے کی کونسلنگ میں حصہ لیا۔

TOPPOPULARRECENT