Tuesday , December 18 2018

مالدیپ میں پینے کے پانی کا بحران ، ایمرجنسی نافذ

کولمبو۔ 6 ڈسمبر۔( سیاست ڈاٹ کام ) مالدیپ کے دارالحکومت میں پانی کے سب سے بڑے ٹریٹمنٹ پلانٹ میں آگ لگنے سے پینے کا پانی کم پڑگیا ہے جس کے بعد ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔ بحران کے بعد مالدیپ نے ہندوستان، سری لنکا، امریکہ اور چین سے امداد کی اپیل کی ہے۔ وزیر محمد شریف کے مطابق مالدیپ کے دارالحکومت مالے میں تقریباً ایک لاکھ لوگ پینے کے صاف

کولمبو۔ 6 ڈسمبر۔( سیاست ڈاٹ کام ) مالدیپ کے دارالحکومت میں پانی کے سب سے بڑے ٹریٹمنٹ پلانٹ میں آگ لگنے سے پینے کا پانی کم پڑگیا ہے جس کے بعد ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔ بحران کے بعد مالدیپ نے ہندوستان، سری لنکا، امریکہ اور چین سے امداد کی اپیل کی ہے۔ وزیر محمد شریف کے مطابق مالدیپ کے دارالحکومت مالے میں تقریباً ایک لاکھ لوگ پینے کے صاف پانی سے محروم ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے ایمرجنسی نافذ کردی ہے اور دکانداروں کو کہا ہے کہ وہ عوام سے پانی کی بوتلوں کے پیسے نہ لیں۔انہوں نے کہا کہ آگ لگنے کے باعث نظام کی بحالی میں کچھ دن لگیں گے۔محمد شریف نے بتایا کہ ہندوستانی بحریہ کا جہاز پانی کی بوتلیں لے کر پہنچا ہے اور آج چین سے بھی ایک اور جہاز پہنچ رہا ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ تکنیکی معاونت کے لیے اتوار کو ایک علیحدہ چینی جہاز بھی پہنچ رہا ہے۔ہندوستانی وزارت خارجہ کے ترجمان سید اکبر الدین کے مطابق ہندوستان پانی کے حامل پانچ ہوائی جہاز اور پلانٹ پر موجود تکنیکی مسائل کے حل میں معاونت کیلئے دو بحری جہاز بھی بھیج رہا ہے۔مالدیپ کی ریڈ کریسنٹ نے پانی کی تقسیم کے لیے 24 اسٹاف اور 60 رضاکار تعینات کیے ہیں۔مالدیپ میں ہر سال ساڑھے سات لاکھ سے زائد سیاح آتے ہیں، ملک کی کل آبادی چار لاکھ ہے جن میں سے اکثریت مسلمان ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT