Tuesday , January 16 2018
Home / شہر کی خبریں / مالیاتی سال کے اختتام سے قبل اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر عمل کو یقینی بنانے کا عزم

مالیاتی سال کے اختتام سے قبل اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر عمل کو یقینی بنانے کا عزم

جناب عمر جلیل کا اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود کا حصول جائزہ کے بعد اجلاس سے خطاب

جناب عمر جلیل کا اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود کا حصول جائزہ کے بعد اجلاس سے خطاب
حیدرآباد۔/16جنوری، ( سیاست نیوز) اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود جناب سید عمر جلیل نے کہا کہ وہ جاریہ مالیاتی سال کے اختتام سے قبل اقلیتی بہبود سے متعلق اسکیمات پر عمل آوری کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات کریں گے۔ شادی مبارک اسکیم کے علاوہ اقلیتی طلبہ کیلئے اسکالر شپ اور فیس باز ادائیگی اور اقلیتی فینانس کارپوریشن کی سبسیڈی اسکیمات پر عمل آوری ان کی اولین ترجیح ہوگی۔ انہوں نے محکمہ اقلیتی بہبود میں مستقل عہدیداروں کے تقرر اور اسٹاف کی کمی کے سلسلہ میں حکومت سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ جناب سید عمر جلیل نے آج سکریٹریٹ میں اپنے عہدہ کی ذمہ داری سنبھال لی۔ انہوں نے ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب جلال الدین اکبر اور منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن پروفیسر ایس اے شکور کے علاوہ محکمہ کے عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد کیا اور واضح کردیا کہ 31مارچ کو مالیاتی سال کے اختتام سے قبل وہ چاہتے ہیں کہ اہم اسکیمات پر تیزی سے عمل آوری کی جائے اور اقلیتی بہبود کیلئے مختص کردہ بجٹ کا زیادہ سے زیادہ استعمال ہو۔ انہوں نے تمام اضلاع کے ڈسٹرکٹ میناریٹیز ویلفیر آفیسرس اور اقلیتی فینانس کارپوریشن کے ایکزیکیٹو ڈائرکٹرس کے ساتھ کل 17جنوری کو ویڈیو کانفرنس طلب کی جس کے اہم موضوعات میں شادی مبارک، اسکالر شپ و فیس بازادائیگی اور اقلیتی فینانس کارپوریشن کی اسکیمات ہوں گے۔ اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے عمر جلیل نے کہا کہ انہیں اس بات کی خوشی ہے کہ تلنگانہ حکومت کیلئے خدمات انجام دینے کی زندگی کی ان کی خواہش پوری ہوئی ہے کیونکہ ان کی پیدائش تلنگانہ کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ محکمہ کے تمام عہدیداروں کو اسکیمات کی تکمیل کیلئے نشانہ مقرر کرتے ہوئے متحرک کریں گے۔ اقلیتوں کی تعلیمی ، سماجی اور معاشی ترقی سے متعلق اسکیمات ان کی ترجیح ہوں گی۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ محکمہ میں اسٹاف کی کمی ہے اور خاص طور پر تربیت یافتہ اسٹاف کافی کم ہے۔ اس کے باوجود وہ محکمہ میں پائی جانے والی خامیوں اور کوتاہیوں کو دور کرنے کے اقدامات کریں گے۔ محکمہ میں باقاعدہ اسٹاف کی تعیناتی کے سلسلہ میں حکومت سے نمائندگی کی جائے گی۔ انہوں نے بتایاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے طلبہ کو بیرون ملک اعلیٰ تعلیم کیلئے 10تا20لاکھ روپئے قرض کی فراہمی سے متعلق ’ پڑھو پردیس‘ اسکیم کو تلنگانہ میں روبہ عمل لانے کی کوشش کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے علاوہ وقف بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کی مساعی کی جائے گی۔ اوقافی جائیدادیں جس مقصد کیلئے وقف کی گئی ہیں منشائے وقف کی تکمیل وقف بورڈ کی ذمہ داری ہوگی۔ ایک سوال کے جواب میں جناب عمر جلیل نے کہا کہ حالیہ عرصہ میں وقف بورڈ نے جن افراد کے خلاف تحقیقات اور کارروائیوں کا آغاز کیا تھا انہیں روکنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ تحقیقات اور کارروائیاں قانون کے مطابق جاری رہیں گی اور ہر کسی کو اپنی مدافعت کا موقع بھی دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ وہ مکہ مکرمہ میں موجود حیدرآبادی رباط میں تلنگانہ کے عازمین حج کے قیام کو یقینی بنانے کی کوشش کریں گے۔ گزشتہ دو برسوں سے تنازعہ کے سبب اس رباط کا استعمال نہیں ہوسکا۔ سابق میں اسپیشل سکریٹری کی حیثیت سے انہوں نے اوقاف کمیٹی اور ناظر رباط کے نمائندوں کے ساتھ اجلاس طلب کیا تھا لیکن کوئی اتفاق رائے نہ ہوسکا۔ انہوں نے کہا کہ رباط کے سلسلہ میں بعض قانونی رکاوٹیں موجود ہیں جس کا حل تلاش کیا جائیگا۔ اسپیشل سکریٹری کے مطابق ریاست کی تقسیم کے بعد سکریٹریٹ اور کمشنریٹ منقسم ہوچکے ہیں اور اقلیتی اداروں کی تقسیم کا عمل جاری ہے جسے جلد مکمل کرلیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کے سلسلہ میں ریونیو حکام کے ساتھ مشترکہ سروے کی کوئی ضرورت نہیں ہے تاہم جائیدادوں کے تحفظ کیلئے محکمہ مال اور وقف بورڈ میں بہتر تال میل کو یقینی بنانے کیلئے ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمود علی سے تعاون حاصل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کے کمپیوٹرائزیشن کا کام مکمل ہوچکا ہے جس کی جانچ کے بعد اسے آن لائن کردیا جائے گا اور کوئی بھی عام آدمی اوقافی جائیدادوں اور ان کی تفصیلات ویب سائیٹ پر حاصل کرسکے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہر پیر کے دن سکریٹریٹ اور حج ہاوز کے دفاتر میں عوامی مسائل کی سماعت کا دن ہوگا۔ وہ سہ پہر 3تا5بجے شام سکریٹریٹ میں عوامی مسائل کی سماعت کریں گے جبکہ حج ہاوز میں موجود دفاتر میں عہدیدار پیر کے دن عوامی شکایات کی سماعت کریں گے۔ جناب عمر جلیل نے بتایا کہ اقلیتی اداروں کے مختلف عہدوں پر مستقل عہدیداروں کے تقرر کو یقینی بنانے کیلئے وہ حکومت سے نمائندگی کریں گے۔ اس موقع پر ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب جلال الدین اکبر، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن پروفیسر ایس اے شکور اور محکمہ کے دیگر عہدیداروں نے جناب عمر جلیل کو گلدستہ پیش کرتے ہوئے اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود کی حیثیت سے تقرر پر مبارکباد پیش کی۔

TOPPOPULARRECENT